لیڈی ریڈنگ ہسپتال پشاو رمیں مریض اپنے ساتھ چارپائیاں لانے پر مجبور

لیڈی ریڈنگ ہسپتال پشاو رمیں مریض اپنے ساتھ چارپائیاں لانے پر مجبور
لیڈی ریڈنگ ہسپتال پشاو رمیں مریض اپنے ساتھ چارپائیاں لانے پر مجبور

  

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک) خیبرپختونخواہ کے ہسپتالوں کی حالت بدلنے سے متعلق پی ٹی آئی کے دعوے اکثر سامنے آتے رہتے ہیں لیکن دوروز قبل سرکاری ہسپتالوں میں فیس دگنی کیے جانے کے بعد کئی ہسپتال بنیادی سہولتوں سے محروم ہیں اور لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں علاج کیلئے مریض اپنی چارپائیاں گھر سے لانے پر مجبور ہیں ۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق تحریک انصاف کی جانب سے خیبر پختونخوا میں تبدیلی کا نعرہ شرمندگی کا باعث بنتا جا رہا ہے، صوبے کے سب سے بڑے لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں غریب مریض علاج کے لئے اپنی چارپائیاں لانے پر مجبور ہیں۔ ایل آر ایچ کے مردانہ وارڈ میں بستر نہ ہونے کی وجہ سے 10 مریض اپنی چارپائیاں خود لے آئے ہیں اور انہی پر مریضوں کا علاج کیا جا رہا ہے۔

اس ضمن میںسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ نئے بیڈ خریدنے کی منظوری دی جا چکی ہے لیکن ابھی تک نئے بیڈ لائے نہیں گئے ہیں ،جیسے ہی نئے بیڈز موصول ہوں گے تومریضوں کو بیڈز پر منتقل کردیا جائے گا۔

صوبائی وزیر صحت شہرام ترکئی نے کہاہے کہ سپتالوں میں سہولیات کے لئے بورڈ آف ڈائریکٹرز سے بات کروں گا تاکہ مریضوں کو فوری طور پر طبی سہولیات کی فراہمی بہتر بنائی جا سکے۔

مزید :

پشاور -