چینی حکام نے غیر ملکی میڈیا کو خاتون اول کے آبائی گاﺅں کا دورہ کرنے سے کیوں روک دیا؟ زندگی کی حیران کن تفصیلات منظرعام پر آ گئیں

چینی حکام نے غیر ملکی میڈیا کو خاتون اول کے آبائی گاﺅں کا دورہ کرنے سے کیوں ...
چینی حکام نے غیر ملکی میڈیا کو خاتون اول کے آبائی گاﺅں کا دورہ کرنے سے کیوں روک دیا؟ زندگی کی حیران کن تفصیلات منظرعام پر آ گئیں

  


لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) چینی صدر ژی جن پنگ کی 52سالہ اہلیہ پنگ لیوآن اپنی دلکش مسکراہٹ اور خوش لباسی کے حوالے سے دنیا بھر میں مشہور ہیں اور لوگ انہیں جیکی کینیڈی اور کارلا برونی سے تشبیہہ دیتے ہیں۔لیکن بہت کم لوگ یہ جانتے ہیں کہ محترمہ پنگ لیوآن نے کامیاب گلوکارہ کے کیریئر سے لے کر آج تک کی کامیابیوں کے حصول کے لیے کڑی محنت کی ہے اور ان کا بچپن انتہائی غربت اور سخت حالات میں گزرا ہے۔

کمیونسٹ پارٹی نہیں چاہتی کہ لوگ پنگ لیوآن کے آبائی گاﺅں کے بارے میں زیادہ معلومات حاصل کریں۔ گزشتہ روز برطانوی اخبار ڈیلی میل کی ٹیم جب اس گاﺅں میں پہنچی تو انہوں نے دیکھا کہ یہاں موجود ہر شخص کو ہدایات دی گئی تھیں کہ غیرملکیوں اور صحافیوں کے آنے پر کمیونسٹ پارٹی کو فوری اطلاع دی جائے اور کوئی ان غیرملکیوں اور صحافیوں کے ساتھ تعاون نہ کرے اور پنگ لیوآن یا ان کے خاندان کے بارے میں کچھ نہ بتائے۔

ڈیلی میل نے اپنی رپورٹ میں بیان کیا ہے کہ جب اس کی ٹیم گاﺅں میں پہنچی تو گاﺅں والوں نے کچھ بھی بتانے سے انکار کر دیا۔ کچھ ہی دیر میں کمیونسٹ پارٹی کاایک مقامی عہدیدار سائیکل پر سوار ان کے پاس پہنچا اور انتہائی شائستگی کے ساتھ انہیں محترمہ پنگ کے بارے میں کچھ معلومات فراہم کیں۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پنگ لیوآن کا بچپن چین کے دورافتادہ گاﺅں میں گزرا جو گردوغبار سے اٹا ہوا تھا۔

یہ1960ءکی دہائی تھی جب چین میں ثقافتی انقلاب آ رہا تھا۔ ماﺅزے تنگ کے انقلاب کے دوران پنگ لیوآن کے انتہائی تعلیم یافتہ خاندان کو طرح طرح کی اذیتیں دی گئیں، ان کے والد اور خاندان کے دیگر افراد اعلیٰ عہدوں پر فائز تھے، انہیں ان عہدوں سے فارغ کرکے انتہائی گھٹیا کام کرنے پر مجبور کر دیا گیا۔ حتیٰ کہ محترمہ پنگ کے والد گاﺅں کے ٹائلٹ صاف کرکے گزراوقات کے لیے چند سکے کماتے تھے۔

محترمہ پنگ لیوآن نے اپنی آہنی ارادوں کے باعث یہ تمام کامیابیاں سمیٹیں، انہوں نے پہلے قومی ترانے گانے کا کامیاب کیریئر بنایا۔ اس طرح ترقی کا سفر طے کرتے کرتے آج وہ دنیا کے بااثرترین شخص کی اہلیہ ہیں اور اپنے سراپے کے باعث نہ صرف چین بلکہ عالمی برادری میں بھی انتہائی مقبولیت رکھتی ہیں۔چینی صدر ژی جن پنگ آئندہ ہفتے برطانیہ کے دورے پر جا رہے ہیں جہاں انہیں ملکہ برطانیہ نے بکھنگم پیلیس آنے کی دعوت دے رکھی ہے۔ محترمہ پنگ لیوآن بھی اپنے شوہر کے ہمراہ بکنگھم پیلیس کی مہمان بنیں گی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس