فلسطین میں اسرائیل کے ہولناک مظالم جاری، لڑکی سمیت مزید 4 افراد شہید، 18 زخمی

فلسطین میں اسرائیل کے ہولناک مظالم جاری، لڑکی سمیت مزید 4 افراد شہید، 18 زخمی
فلسطین میں اسرائیل کے ہولناک مظالم جاری، لڑکی سمیت مزید 4 افراد شہید، 18 زخمی

  


الخلیل/ غزہ/ تل ابیب (اے این این) فلسطین میں اسرائیلی مظالم اور قبضے کے خلاف احتجاج جاری، صیہونی فوج کی فائرنگ، دستی بموں کے حملوں اور دھاتی گولیوں کی فائرنگ سے لڑکی سمیت مزید4فلسطینی شہید، 18زخمی، 1 گرفتار کر لیا گیا، مشتعل فلسطینیوں کے اسرائیلی فوج پر پٹرول بم سے حملے، خنجر زنی اور پتھرائو سے 5اہلکار زخمی ہو گئے، فلسطینی نوجوانوں نے اسرائیل کے ایک کنٹرول ٹاور کو آگ لگا دی، اسرائیل مخالف مہم میں مدارس کے طلباءبھی شامل ہو گئے، احتجاجی مظاہروں، ریلیوں اور جلسے جلوسوں کا سلسلہ عروج پر پہنچ گیا۔

عرب میڈیا اور مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے جنوبی شہر الخلیل میں اسرائیلی فوج کی ریاستی دہشت گردی کے نتیجے میں 4 فلسطینی نوجوانوں کو شہید کردیا گیا۔نہتے فلسطینیوں کی شہادت کے واقعات کے بعد پورا شہر غم وغصے کی فضا میں ڈوب گیا اور لوگ صہیونی فوج کے خلاف نعرے لگاتے سڑکوں پرنکل آئے۔ شہدا کی شناخت 18 سالہ فضل القواسمی، ایک 16 سالہ لڑکی بیان اعسیلی اور 18سالہ طارق النتشہ کے ناموں سے کی گئی ہے جبکہ ایک شہری کی شناخت کے حوالے سے کچھ نہیں بتایا گیا جسے یروشلم کے مضافات میں گولی مار کر شہید کیا گیا۔ اس فلسطینی نوجوان کی لاش بھی اسرائیلی فوج نے اپنی تحویل میں لے لی ہے۔

یروشلم سے ملحقہ علاقے میں ایک اور نوجوان کی شہادت کی اطلاع ہے تاہم اس کی تصدیق نہیں ہو سکی ۔۔ صہیونی فوجیوں کی جانب سے دعوی کیا گیا کہ شہید ہونے والے فلسطینیوں نے یہودی آباد کاروں اور فوجیوں پر چاقو سے حملے کیے تھے۔ الخلیل شہر میں3 فلسطینیوں کی شہادت کے خلاف پورے شہر میں سخت غم وغصے کی فضا پائی جا رہی ہے۔ رات گئے مختلف علاقوں میں نقاب پوش فلسطینی نوجوانوں اور اسرائیلی فوج کے درمیان آنکھ مچولی جاری رہی۔ مظاہرین نے صہیونی فوجیوں پر پتھراﺅ کے ساتھ ساتھ ان پر پٹرول بموں سے بھی حملے کیے ہیں۔ جبکہ قابض فوجیوں نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے ان پر گولیاں چلائیں اور آنسوگیس کی شیلنگ کی۔

مزید : بین الاقوامی