ہٹلر کا گھرگرانے کا فیصلہ ہوگیا

ہٹلر کا گھرگرانے کا فیصلہ ہوگیا
ہٹلر کا گھرگرانے کا فیصلہ ہوگیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ویانا(مانیٹرنگ ڈیسک) آسٹریا کی حکومت نے ایڈولف ہٹلر کا پیدائشی گھر گرانے کا فیصلہ کیا ہے، یہ گھر ایک عرصہ تک بطور گیسٹ ہاؤس استعمال ہوتا رہا اور اس وقت ماہانہ پانچ ہزار تین سو ڈالر کرائے پر ہے ،حکومت نے اس تین منزلہ عمارت کو حاصل کرنے کی متعدد کوششیں کیں لیکن گھر کی مالکن نے انکار کردیا۔ ہٹلر کے پیدائشی گھر کے مستقبل سے متعلق بحث کے زور پکڑنے کے بعد اسے گرانے کا فیصلہ کیا گیا ہے.

مزید پڑھیں :”وہ تو جنٹل مین ہیں“ٹرمپ کی اہلیہ شوہر کی ساکھ بچانے میدان میں آگئیں

توقع کی جا رہی ہے کہ آسٹریا کی پارلیمان جلد ہی اس مکان کا قبضہ اس کی مالکن سے لینے کا قانون پاس کرے گی۔ وزیر داخلہ ولف گینگ سوبوتکا نے ماہرین کی ٹیم کو بتایا کہ حکومت نے اس گھر کو منہدم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس اقدام کا مقصد اسے نیو نازیوں کا مرکز بننے سے بچانا ہےاور یہاں بنائی جانے والی نئی عمارت انتظامی امور یا پھر فلاحی کاموں کے لیے استعمال میں لائی جائے گی۔