انتخابات 2018ء جیت کر ملک کے اداروں کو ٹھیک کریں گے، عمران خان

انتخابات 2018ء جیت کر ملک کے اداروں کو ٹھیک کریں گے، عمران خان

مالاکنڈ(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ ان کی جماعت الیکشن 2018 میں کامیاب ہوکر ملکی اداروں بشمول نیب اور ایف بی آر کو ٹھیک کرے گی۔مالاکنڈ یونیورسٹی میں تقریب سے خطاب میں انہوں نے کہا کہ طاقتور کیلئے ایک اور کمزور کیلئے دوسرے قانون سے اقوام تباہ ہوجاتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ ملک تب تباہ ہوتا ہے جب ملک کے ادارے تباہ ہوجاتے ہیں، گورننس کی ناکامی سے ہی ملک مقروض ہوگیا ہے، آج بنگلہ دیش بھی پاکستان سے آگے نکل چکا ہے کیونکہ دنیا کی خوشحال قوموں کا گورننس سسٹم بہترین ہے۔عمران خان نے کہا کہ ادارے مضبوط ہوں تو ملک آگے جاتا ہے، درست نظام میں عدالتیں فیصلہ کرتی ہیں تو یہ نہیں کہا جاتا کہ مجھے کیوں نکالا۔انہوں نے کہا کہ گورننس کا مطلب ملکی اداروں میں قانون اور میرٹ کا نظام بہتر کرنا ہوتا ہے، مسلمان ملکوں کے پیچھے رہنے کی ایک وجہ بادشاہت ہے۔پی ٹی آئی سربراہ نے کہا کہ پاکستان میں ملزمان 40 گاڑیوں کے پروٹوکول کے ساتھ عدالت آتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہم نے خیبرپختونخوا میں پولیس کا نظام بہتر کیا، پنجاب اور سندھ میں لوگ پولیس سے ڈرتے ہیں، اے ڈی خواجہ خود کہتے ہیں کہ سندھ میں پولیس افسران پیسے دے کر اوپر آتے ہیں۔عمران خان نے کہا کہ خیبرپختونخوا پولیس کی طرح ہر ادارہ ٹھیک ہوسکتا ہے، ہم میرٹ پر آئی جی کو لائے تو خیبرپختونخوا پولیس میں بہتری آگئی اورخیبرپختونخوا میں بہتر پولیس کی وجہ سے جرائم میں 70 فیصد کمی آئی۔ انہوں نے کہا کہ ملک ایٹم بموں سے نہیں بلکہ ادارے کمزور کرنے سے تباہ ہوتا ہے ۔ پاکستان میں ٹیکس وصولی 35سو ارب روپے ہے جس میں 32ارب ایف بی آر کی چوری ہے اور نیب کی ایک دن کی کرپشن 12ارب روپے ہے اگر نیب اور ایف بی آر سمیت دیگر ادارے مضبوط ہوجائیں تو ملک ترقی کرجائے گا لیکن یہاں پر تو مجرم بھی 40سے زائد گاڑیوں کے پروٹوکول کے ساتھ احتساب عدالت میں آتا ہے اور آصف زرداری کرپشن کا بادشاہ بھی ہرجانے کے دعوے کرتا ہے۔عمران خان نے کہا کہ ہم نیب کو خود مختار بنائیں گے تاکہ وہ چھوٹے چھوٹے پٹواریوں کو نہیں بلکہ بڑے بڑے سیاستدانوں کو پکڑے اور ملک ترقی کرے لیکن یہاں پر شہباز شریف،نجم سیٹھی ،آصف زرداری اس کی بہن فریا ل تالپور نے مجھ پر اربوں روپے کے ہرجانے کے دعوے کئے ہوئے ہیں اب آصف زرداری جیسا آدمی کرپشن کی بات کرے تو یہ قیامت کی نشانی ہے۔ عمران خان نے کہا کہ 12مئی کو بانی ایم کیو ایم کے کہنے پر 50لوگوں کو قتل کیا گیا اور کوئی بھی موت کے ڈر سے بانی ایم کیو ایم کے خلاف آواز نہیں اٹھاتا تھا لیکن آج وہ لندن میں بیٹھ کر عجیب و غریب باتیں کررہا ہے۔

عمران خان

مزید : صفحہ اول


loading...