سپریم کورٹ ، عمران خان کی ایک لاکھ پاؤنڈ کی منی ٹرین عدم اطمینان کا اظہار

سپریم کورٹ ، عمران خان کی ایک لاکھ پاؤنڈ کی منی ٹرین عدم اطمینان کا اظہار

اسلام آباد (آن لائن )عدالت عظمیٰ نے عمران خان کی جانب سے ایک لاکھ پاؤنڈ کی منی ٹریل سے عدم اطمینان کا اظہار کر دیا ہے اور چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے ہیں کہ عمران خان کی جانب سے جمع کرائی گئی دستاویزات اب بھی مکمل نہیں ہیں ، یہ سلسلہ کہیں نہ کہیں ٹوٹ جاتاہے نعیم بخاری نے 82 ہزارپاونڈ عمران خان کے وصول کرنے کا بتایا توچیف جسٹس نے کہا کہ یہ رقم بنی گالا تعمیرات سے جوڑناچاہتے ہیں جسٹس عمرعطابندیال کا کہنا تھا کہ 27 ہزارپاونڈ کااب بھی معلوم نہیں ہوا ،چیف جسٹس نے مزید کہاکہ دستاویزات کی ساکھ ہمیشہ چیلنج کی گئی ہے ، جسٹس عمرعطابندیال نے دستاویزتاخیرسے آنے کا شکوہ کیا اورکہا کچھ صفحات سامنے نہیں آئے جس سے27 ہزارپاونڈ کامعلوم ہو، وکیل نعیم بخاری نے کہاکہ تمام رقم کی ٹرانزیکشن بینکوں کے ذریعے کی گئی ایک لاکھ پاونڈ پرپاکستان میں ٹیکس کانفاذ نہیں ہونا تھا اب تک کے جوابات کمزوردستاویزپرمبنی تھے وکیل نے بتایاکہ 2003 کوجمائما نے عمران خان 93 ہزارپاونڈ بھیجے جس پرچیف جسٹس بولے اس رقم کوآپ بنی گالا تعمیرات سے تعلق جوڑناچاہتے ہیں این ایس ایل اکاونٹ میں مقدمہ بازی کیلئے رکھی گئی رقم کا ریکارڈ نہیں دیا گیا وکیل نے ایک لاکھ پاونڈ میں سے 82 ہزارپاونڈ عمران خان کے وصول کرنے کا بتایا ، سپریم کورٹ نے عمران خان کی ایک لاکھ پاونڈ کی منی ٹریل درخواست پرحنیف عباسی سے جواب طلب کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت آج بدھ تک ملتوی کردی ۔

عمران ،سپریم کورٹ

مزید : صفحہ اول


loading...