اثاثہ جات ریفرنس،اسحاق ڈار کے وکیل کی غیر حاضری کے باعث سماعت23 اکتوبر تک ملتوی

اثاثہ جات ریفرنس،اسحاق ڈار کے وکیل کی غیر حاضری کے باعث سماعت23 اکتوبر تک ...
اثاثہ جات ریفرنس،اسحاق ڈار کے وکیل کی غیر حاضری کے باعث سماعت23 اکتوبر تک ملتوی

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈارکیخلاف اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت23 اکتوبر تک ملتوی کر دی گئی،تفصیلات کے مطابق اسحاق ڈار کیخلاف ریفرنس کی سماعت احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے کی،وفاقی وزیر خزانہ ، نیب پراسیکیوٹر اور استغاثہ کے گواہ عدالت میں پیش ہوئے جبکہ اسحاق ڈار کے وکیل خواجہ حارث عدالت میں پیش نہیں ہوئے،دوران سماعت جونیئر وکیل نے عدالت کو بتایا کہ خواجہ حارث کو اچانک بیرون ملک جانا پڑاہے،آپ گواہ کا بیان ریکارڈ کر لیں، جرح خواجہ حارث کے آنے پر کی جائے ،یہ کوئی گیم نہیں ہے۔

اس پر نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ قانون کے مطابق بیان ریکارڈ اور جرح ایک ہی دن ہوتی ہے،خواجہ حارث کیس کے ساتھ کمٹڈنہیں ہیں۔

دوران سماعت احتساب عدالت کے جج نے جونیئر وکیل سے استفسار کیا کہ خواجہ حارث کب تک واپس آئیں گے؟

جونیئر وکیل نے بتایا کہ خواجہ حارث بدھ تک واپس آ جائیں گے ۔

احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے کہا کہ آپ گواہ پر جرح کرلیں۔

اس پر معاون وکیل نے جواب دیا ہمیں جرح کرنے کی ہدایت نہیں ہے۔

نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ ملزم کوگرفتارکریں وکیل خودآجائے گا،ایک ماہ سے زائد کا وقت گزررچکا ہے فرد جرم عائد نہیںہو رہی ۔

عدالت نے جج نے اسحاق ڈار سے استفسار کیا کہ کیاآپ کسی اوروکیل کومقررکر سکتے ہیں؟۔

اس پر اسحاق ڈار نے کہا کہ میرااعتمادصرف خواجہ حارث پرہے،رات تک مجھے بتایاگیاکہ خواجہ حارث پیش ہوں گے۔

عدالت نے کیس کی سماعت مزید 23 اکتوبر تک ملتوی کر دی ۔

مزید پڑھیں:۔سیکیورٹی ادارے ہماری فرنٹ لائن،عمران خان 26اکتوبر کو الیکشن کمیشن میں پیش نہ ہوئے تو عدالت کے حکم پرقانون حرکت میں آئے گا: احسن اقبال

مزید : قومی /اہم خبریں


loading...