طاہر القادری اور ان کے بیٹوں کے خلاف منی لانڈرنگ انکوائری داخل دفترکردی:نیب کا ہائی کورٹ میں بیان

طاہر القادری اور ان کے بیٹوں کے خلاف منی لانڈرنگ انکوائری داخل دفترکردی:نیب ...
طاہر القادری اور ان کے بیٹوں کے خلاف منی لانڈرنگ انکوائری داخل دفترکردی:نیب کا ہائی کورٹ میں بیان

  


لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ کونیب حکام کی طرف آگاہ کیا گیا ہے کہ طاہر القادری اور ان کے بیٹوں کے خلاف منی لانڈرنگ سے متعلق انکوائری مکمل کرکے داخل دفتر کردی گئی ہے جس پر فاضل بنچ نے طاہر القادری کے بیٹوں کی طرف سے نیب انکوائری کے خلاف دائردرخواست واپس لینے کی بنا پر نمٹا دی ۔

عدالتی وقت ضائع کرنے پر درخواست گزار کو 10ہزار روپے جرمانہ

نیب کے پراسیکیوٹر کی طرف سے عدالت کو بتایا گیا کہ طاہر القادری کے بیٹوں کے خلاف انکوائری داخل دفتر کردی گئی ہے ۔طاہرالقادری کے بیٹوں حسن محی الدین اور حسین محی الدین نے نیب کی جانب سے بھجوائے گئے انکوائری کے نوٹسوں کو عدالت عالیہ میں چیلنچ کر رکھا تھا،درخواست گزار وں کے وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ نیب طاہر القادری کے بیٹوں کیخلاف منی لانڈرنگ کی انکوائری کر رہا تھا تاہم نیب ازخود ہی طاہرالقادری کے دونوں بیٹیوں کے خلاف انکوائری روک دی ہے ،وکیل نے استدعا کی کہ انکوائری روکنے کی وجہ سے ان کے موکل درخواست واپس لینا چاہتے ہیں، 

مزید : لاہور


loading...