خواتین یونیورسٹی اور ہائر ایجوکیشن کمیشن کے اشتراک سے پنک ربن ڈے کا انعقاد

خواتین یونیورسٹی اور ہائر ایجوکیشن کمیشن کے اشتراک سے پنک ربن ڈے کا انعقاد

  

ملتان (سٹاف رپورٹر) خواتین یونیورسٹی ملتان میں پنک ربن اور ہاہر ایجوکیشن کمیشن کے باہمی اشتراک سے اور ڈائریکٹر سٹوڈنٹ افیئرز کے زیراہتمام پنک ربن ڈے منایا کیا گیا۔ تقریب کا افتتاح سینئر فیکلٹی ممبران اور انتظامی افسراں نے کیا۔ چیف آرگنائزر پروفیسر قدسیہ خاکوانی تھیں (بقیہ نمبر35صفحہ12پر)

۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پروفیسر قدسیہ خاکوانی نے کہا کہ دینا میں اکتوبر کے مہینے کو چھاتی کے سرطان سے آگاہی کے حوالے سے دن منایا جاتا ہے جسں کا مقصد اس مرض کے متعلق نوجوان نسل میں آگاہی فراہم کرنا ہے اور اس کی وجوہات‘ احتیاط اور علاج کے لئے تدابیر فراہم کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چھاتی کے سرطان کی تشخیص کے لئے خواتین کو خود سے تشخیصی عمل کے بارے میں جاننا بہت ضروری ہے اس مرض سے نمٹنے کے لیے سب سے ضروری ہے کہ اس کی بروقت تشخیص ہو اور وہ تب ہی ممکن ہے جب وہ اس مرض کی بنیادی معلومات سے آگاہ ہوں۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر عصمت ناز نے کہا کہ خواتین کا غیر صحت مندانہ طرز زندگی اور غیر متوازن خوراک بھی چھاتی کے سرطان کا سبب بن سکتی ہیں۔ دنیا بھر میں چھاتی کا کنیسر عام ہوتا جا رہا ہے اور اس کنیسر کے سبب ہر سال پاکستان میں چالیس ہزار سے زائد خواتین موت کے منہ میں چلی جاتی ہیں۔لہذا اس مرض پر قابو پانے کے لئے سب سے پہلی چیز اس مرض کی بروقت تشخیص ہے۔ وہ خواتین جن کی عمر 40 سال سے زیادہ یا کم بھی ہے وہ اپنا چپک اپ پابندی سے کروائیں۔ اس موقع پر پروفیسر فرزانہ اکرم نے کہا کہ خواتین اپنا ذاتی معائنہ کر کے ابتدامیں ہی اس مرض کے بارے میں جان کر اس پر قابو پا سکتی ہیں کیونکہ یہ ایک ایسا موذی مرض ہے جس کی تشخیص ابتداء میں مشکل ہے اور عام طور پر اس وقت پتہ چلتا ہے جب اس پر قابو پانا مشکل ہو جاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ ویمن یونیورسٹی ملتان میں صحتمندانہ طرز زندگی گزارنے کے حوالے سے خصوصی سرگرمیوں کا اہتمام کیا جاتا ہے تاکہ طالبات میں شعور اجاگر ہو اور وہ ایک محفوظ اور صحت مند ماحول میں اپنی زندگی گزار سکیں۔اس موقع پر طالبات نے مختلف سٹالز لگائے۔

پنک ربن ڈے ؎

مزید :

ملتان صفحہ آخر -