وزیراعلٰی عثمان بزدار کا محکمہ صحت کو ینگ ڈاکٹرز کے مسائل بات چیت سے جلد حل کرنے کا حکم 

      وزیراعلٰی عثمان بزدار کا محکمہ صحت کو ینگ ڈاکٹرز کے مسائل بات چیت سے جلد ...

  

لاہور(جنرل رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے ینگ ڈاکٹرز کے احتجاج کے مسئلہ کو بات چیت کے ذریعے جلد حل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ اگر کہیں ڈیڈ لاک ہے تو اسے مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کیلئے اقدامات کیے جائیں،ینگ ڈاکٹرز کے احتجاج سے اصل مشکل مریضوں اوران کے تیمارداروں کو ہورہی ہے،میں چاہتا ہوں ہسپتال آنے والے ہر مریض کو علاج معالجے کی سہولتیں میسر ہوں لہٰذا محکمہ صحت کے حکام فوری طورپرافہام تفہیم کے ساتھ مسئلے کو حل کریں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اعلیٰ سطحی اجلاس میں کیا۔اجلاس میں لاہور کے بڑے ہسپتالوں کی او پی ڈیز، ایمرجنسیز اور ان ڈور وارڈزمیں ہیلتھ کیئر کی سہولتوں کو بہتر بنانے کے پروگرام پر پیش رفت کا جائزہ لیاگیا۔وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ صوبے میں ہسپتالوں کی حالت کو بہتر بنانا ہماری ذمہ داری بھی ہے اورکارخیربھی۔ہسپتالوں میں جو اچھا کام کرے گا،اس کی حوصلہ افزائی کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ ایک ایک لمحہ قیمتی ہے،ہیلتھ کیئر کی معیاری سہولتوں کیلئے آپ سب نئے عزم اورجذبے سے فرائض سرانجام دیں۔میری خواہش ہے کہ پاکستان کے ہسپتال اس معیار کے ہوں،لوگ باہر سے علاج کیلئے یہاں آئیں۔انہوں نے کہا کہ جناح،جنرل،سروسز،میو،گنگارام اورچلڈرن ہسپتالوں میں مریضوں کو معیاری علاج معالجہ فراہم کرنے کیلئے ہرممکن وسائل فراہم کریں گے۔وزیراعلیٰ نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جناح ہسپتال میں میڈیکل ٹاوربنایا جائے گا اور میڈیکل ٹاورمیں جناح انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی بھی بنایا جائے گا۔کارڈیالوجی کا یونٹ200بستروں پر مشتمل ہوگاجس میں توسیع کی گنجائش موجود ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ جناح ہسپتال کی فارمیسی میں توسیع کی جائے گی۔ہسپتالوں میں مریضوں کی سہولت کیلئے مناسب مقامات پر بورڈز آویزاں کیے جارہے ہیں۔او پی ڈیزکے ساتھ ان ڈوروارڈزکی تزئین نوپر کام کا آغاز کردیاگیا ہے۔جناح ہسپتال کیلئے سٹیل برج بھی بنایا جائیگا،جس سے مریضوں اورتیمارداروں کو آمدورفت میں سہولت ملے گی۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ میو ہسپتال کی ایمرجنسی میں سہولتیں بہتر بنانے پر کام کی رفتار مزید تیزکی جائے۔ جنرل ہسپتال کی ایمرجنسی اورپارکنگ کے مسئلے کے حل کیلئے فوری اقدامات کیے جائیں۔ گنگارام ہسپتال کے وارڈزکی تزئین نو کے کام کو جلد سے جلد مکمل کیاجائے۔وزیراعلیٰ نے سروسز ہسپتال میں ریڈیالوجی ٹاورکودسمبرتک مکمل کرنے کی ہدایت کی اورکہا کہ سروسز ہسپتال کی نئی ایمرجنسی کیلئے بھی جامع پلان تیارکیا جائے۔چلڈرن ہسپتال کی نئی پارکنگ بنانے کیلئے اراضی کی نشاندہی جلد کر کے رپورٹ پیش کی جائے، چلڈرن ہسپتال کو یونیورسٹی آف چائلڈ ہیلتھ سائنسز کا درجہ دیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ شیخ زید ہسپتال رحیم یارخان کی نئی عمارت تعمیر کی جائے گی اورشیخ زید ہسپتال رحیم یار خان کی نئی عمارت پر 6ارب روپے لاگت آئے گی۔ وزیراعلیٰ کو ہسپتالوں میں طبی سہولتوں کی بہتری کے پروگرام پر پیش رفت کے بارے میں بریفنگ دی گئی۔

سردار عثمان بزدار

مزید :

صفحہ اول -