’لاڑکانہ کے بعد بھی پیپلز پارٹی کومزید دھچکوں کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے کیونکہ ۔۔۔‘ مظہر عباس نے بلاول کیلئے خطرے کی گھنٹی بجادی

’لاڑکانہ کے بعد بھی پیپلز پارٹی کومزید دھچکوں کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے ...
’لاڑکانہ کے بعد بھی پیپلز پارٹی کومزید دھچکوں کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے کیونکہ ۔۔۔‘ مظہر عباس نے بلاول کیلئے خطرے کی گھنٹی بجادی

  



کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار مظہر عباس نے کہاہے کہ لا ڑکانہ کا الیکشن پیپلزپارٹی کی آنکھیں کھول دینے کیلئے کافی ہے ، اگر ان کی جانب سے سندھ کو نظر انداز کیا جاتا رہا تو پیپلز پارٹی کو مزید دھچکوں کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے ۔

جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“میں گفتگو کرتے ہوئے مظہر عباس نے کہا کہ لاڑکانہ کا الیکشن پیپلزپارٹی کی آنکھیں کھول دینے کیلئے کافی ہے ، اگر ان کی جانب سے سندھ کو نظر انداز کیا جاتا رہا تو پیپلز پارٹی کو مزید دھچکوں کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اگر مولانا فضل الرحمن کے مارچ کے نتیجے میں پارلیمنٹ اڑ جاتی ہے تو پھر یہ مارچ کیسے درست ہوسکتا ہے؟ اگر ہم یہ روایات ڈال رہے ہیں کہ ہم کسی بھی منتخب حکومت کوگھر بھیج رہے ہیں تو پھر ہم دوسروں کے ہاتھوں میں کھیل رہے ہیں۔

مظہر عباس کا کہنا تھا کہ بتایا جائے کہ اگر یہ حکومت ختم ہوجاتی ہے تو کیا آپ کے پاس کوئی اس کا متبادل پلان ہے۔عمران خان کی حکومت سے کتنا بھی اختلاف ہولیکن اس کا متبادل کیا ہوگا ؟ یہ غلط روایات قائم کی جارہی ہیں جو 2009اور 2014میں بھی قائم کی گئی تھیں۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی