11جماعتیں ملکر 20ہزار عوام کو جمع نہ کرسکیں،ملکی تحفظ کے ضامن اداروں کیخلاف مہم جوئی غداری:وزراء معاونین

11جماعتیں ملکر 20ہزار عوام کو جمع نہ کرسکیں،ملکی تحفظ کے ضامن اداروں کیخلاف ...

  

 اسلام آباد (سٹاف رپورٹر،مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز نے کہا ہے نواز شریف کے ذاتی ایجنڈے میں عوام ساتھ نہیں، ملکی تحفظ کے ضامن اداروں کیخلاف مہم جو ئی کی اجازت نہیں دیں گے، ان کا کوئی سیاسی مستقبل نہیں۔شبلی فراز نے لیگی رہنما خواجہ آصف اور چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو کی نازیبا زبان کی مذمت کرتے ہوئے کہا گیارہ جما عتوں پر مشتمل اپوزیشن الائنس ملکر بھی ایک چھوٹا سا سٹیڈیم نہیں بھرسکا باقی چیلنج کیا قبول کریگا، اپوزیشن کو گوجرنوالہ میں ناکام جلسے سے سبق سیکھ لینا چاہیے۔وفاقی وزیر سائنس ا ینڈ ٹیکنا لوجی فواد چودھری کا کہنا تھا یہ دشمن کا بیانیہ آگے بڑھا رہے ہیں، میں نواز شریف کے باہر جانے کیخلاف تھا، جب ایسے لوگ باہر جاتے ہیں تو وہ عالمی ایجنڈے کا حصہ بن جا تے ہیں، کیا اداروں کیخلاف بات غداری کے زمرے میں نہیں آتی؟ نواز شریف کو لندن سے واپس لایا جائے گا، پی ڈی ایم کے جلسے میں کشمیر اور کلبھوشن پر بات نہیں کی گئی۔ ا پو ز یشن کو اصلیت نظر آنے پر مزید جلسوں پر نظر ثانی کرنی چاہیے، لیگی کارکنوں نے خود کو علیحدہ کرلیا ہے، ن لیگ والوں سے کہتا ہوں خطرناک کھیل نہ کھیلیں، نواز شریف کو سمجھ نہیں آ رہی کہ کیسے بدلہ لیں، پاکستان کے اداروں پر تنقید بھارت کا ایجنڈا ہے۔ 11 جماعتیں اکٹھی ہو کر بھی 15 سے 18 ہزار افراد جمع کرسکیں، فضل الرحمان نے خالی کرسیوں سے خطاب کیا۔

 وزیر اعظم کے معاون خصوصی زلفی بخاری نے بلاول کی تقریر کو گھٹیا اور کم ظرفی سے بھرپور قرار اور کہا بلاول کے والدلوٹ کھسوٹ سے مال جمع نہ کرتے تو آج والد کی طرح سینما ٹکٹس بلیک کر رہا ہوتا۔ بلاول بھٹو کی تقریر ایک نئی گراوٹ اورہلکے پن کا مظاہرہ تھی، وفاقی وزیر مذہبی امور نور الحق قادری نے اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کا مستقبل تار یک قرار دیا اور کہاکہ اپوزیشن کا ایجنڈا ہی واضح نہیں تو ان کیساتھ کون نکلے گا۔ اپوزیشن کی ہر جماعت الگ سمت میں رواں دواں ہے۔وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سیاسی روابط شہباز گل نے کہا 11جماعتیں بارہواں بھارت، سنٹر پنجاب کے اٹھارہ شہروں سے کرائے کے کارکن لا کر بھی 22000کا مجمع اکٹھا نہ کر سکے۔ جلسوں سے آپکی حقیقت کیلبری کوئین،جعلی ٹرسٹ ڈیڈ۔ٹی ٹی کرپشن زدہ خاندان ہی رہنی ہے،بدلنی نہیں،11بونے لوگ اکٹھے بھی ہو جائیں تو خان کے سیاسی قد سے چھوٹے ہی ہیں۔وفاقی وزیر دفاع پرویز خٹک نے دوٹوک الفاظ میں واضح کر دیا کہ اپوزیشن میں شامل سیاسی جماعتوں کی قیادت اپنی چوریاں چھپانے کیلئے اکٹھی ہوئی ہیں اور اس مقصد کیلئے ان کی خواہش ہے کہ قومی احتساب بیورو کو ختم کیا جا سکے، لیکن ان کا یہ خواب کبھی پورا نہیں ہو گا، عمران خان کی قیادت میں پاکستان تحریک انصاف کی موجودہ وفاقی اور صوبائی حکومتیں اپنی معیاد پوری کرئے گی۔ مولانا فضل الرحمن اب تو اسلام کی با ت کر رہے ہیں لیکن جب خیبر پختونخوا میں ایم ایم اے کی حکومت تھی تو اس دوران انہوں نے اسلام کیلئے کونسی خدمت کی۔

وزراء معاونین

مزید :

صفحہ اول -