روز ویلٹ ہوٹل کی نجکاری؟

روز ویلٹ ہوٹل کی نجکاری؟

  

وفاقی وزیر برائے نجکاری محمد میاں سومرو نے سینیٹ میں ان19اداروں کی فہرست پیش کر دی ہے جن کی نجکاری ہو گی،ان میں سٹیل ملز اور پی ایس او کے علاوہ  نیو یارک کا ہوٹل روز ویلٹ بھی شامل ہیں۔ سینیٹ میں جواب دیتے ہوئے انہوں نے نجکاری کے لئے متعین اداروں کی فہرست دی، اس میں روز ویلٹ ہوٹل، پاکستان سٹیل مل، جناح کنونشن سنٹر، پی ایس او،او جی ڈی سی ایل، سٹیٹ لائف انشورنش کارپوریشن، ایس ایم ای بنک، فرسٹ ویمن بنک، بلوکی پاور پلانٹ، حویلی بہادر شاہ پاور پلانٹ، انجینئرنگ کمپنی، سروسز انٹرنیشنل ہوٹل، ماڑی پٹرولیم اور نندی پور پاور پلانٹ بھی شامل ہیں، حکومت نے سٹیل مل کی نجکاری کے لئے ملازمین کو فارغ کرنے کی غرض سے گولڈن  شیک ہینڈ سکیم کے لئے رقوم بھی مختص کر دی ہیں۔محمد میاں سومرو کی طرف سے پیش کی جانے والی فہرست سے یہ امر واضح ہو گیا کہ روز ویلٹ ہوٹل نیو یارک جسے31 اکتوبر سے بند کر دیا جائے گا، فروخت ہو گا،حالانکہ کئی وزراء اور معاونین خصوصی اس کی تردید بھی کرتے رہے ہیں،چند روز پہلے بھی تردید کی گئی تھی اس فہرست میں سٹیٹ لائف انشورنش اور پی ایس او بھی حیران کرنے والے ہیں کہ یہ نفع بخش ادارے ہیں،روز ویلٹ ہوٹل کے حوالے سے کئی کہانیاں بھی گردش کرتی رہیں اور کر رہی ہیں،اِس لئے حکومت کا فرض ہے کہ وہ اِس امر میں احتیاط کرے اور جو بیان دیا جائے وہ بھی درست ہو تاکہ بعد میں کچھ اور ثابت نہ ہو۔

مزید :

رائے -اداریہ -