کراچی:کسٹمز کی کارروائی،کروڑوں مالیت کے باز برآمد 

کراچی:کسٹمز کی کارروائی،کروڑوں مالیت کے باز برآمد 

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاکستان کسٹمز پریونٹیو کے شعبہ اینٹی اسمگلنگ آرگنائزیشن نے باز کا غیر قانونی کاروبار کرنے والوں کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے 20 کروڑ روپے سے زائد مالیت کے اعلی نسل کے 75 باز ضبط کرکے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیاہے۔کلکٹر کسٹم پریونٹو ثاقف سعید نے ہفتہ کو کسٹم کلب کیماڑی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ ایک خفیہ اطلاع موصول ہوئی کہ ڈیفنس ہاسنگ اتھارٹی کے علاقے میں اسمگلنگ کی غرض سے اعلی نسل کے باز چھپائے گئے ہیں، منظم اسمگلروں کا گروہ یہ غیر قانونی کاروبار گزشتہ طویل دورانیے سے کر رہا ہے۔اطلاع ملنے پر اسسٹنٹ کلکٹر شفیع اللہ کی سرابرہی میں سپرنٹنڈنٹ افتخار ملک اور دیگر افسران و اہل کاروں پر مشتمل ٹیم تشکیل دی گئی جس نے ڈیفنس کلفٹن کے علاقے میں واقع ایک بنگلے پر چھاپہ مارا تو وہاں پر موجود لوگوں کی جانب سے زبردست مزاحمت کی گئی۔محکمہ کسٹمز کی چھاپہ مار ٹیم اور ملزمان کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ بھی ہوا لیکن محکمہ کسٹمز کی چھاپہ مار ٹیم وہاں پر چھپائے گئے 75باز برآمد کرنے میں نا صرف کامیاب رہی بلکہ اس غیرقانونی کاروبار میں ملوث ملزمان کو بھی گرفتار کرلیا۔پکڑے پرندوں کی قیمت 20کروڑ روپے سے زائد بتائی جاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ باز کے غیر قانونی کاروبارمیں ملوث ملزمان نے اپنے گرفتار ساتھیوں اور پکڑے گئے باز کو چھڑوانے کے لیے فائرنگ کی تھی لیکن ان کی یہ مزاحمت محکمہ کسٹمز کی چھاپہ مار ٹیم نے ناکام بنادی اور کامیابی کے ساتھ باز اور ملزمان کو اپنے ساتھ لے گئے۔ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش کا آغاز کردیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ نایاب پرندوں کی اسمگلنگ میں ملوث ملزمان بااثر ہیں جو قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچاتے ہیں۔پرندوں کی اسمگلنگ کے خلاف کارروائی جاری رہے گی۔پکڑے گئے پرندوں کو عالمی قوانین کے تحت کھلی فضا میں چھوڑا جائے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -