دشمنان اسلام کی سازشوں کو عوام ناکام بنادیں گے: علامہ طاہر اشرفی 

  دشمنان اسلام کی سازشوں کو عوام ناکام بنادیں گے: علامہ طاہر اشرفی 

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)وزیراعظم کے معاون خصوصی اور پاکستان علما کونسل کے سربراہ مولانا طاہر اشرفی نے کہا ہے کہ جو لوگ ملک میں فرقہ واریت کو ہوا دینا چاہتے ہیں  و ہ چاہتے ہیں کہ عوام کو فوج اور اسلام سے دور کیا جائے۔ دشمنان اسلام کی سازشوں کو عو ام ناکام بنادیں گے۔مہنگائی کو کنٹرول کرنے کے لیے وزیراعظم جلد اہم اعلانات کریں گے۔نجومی نہیں کہ بتاسکوں حکومت کب جائے گی؟۔حکومت اپنی مدت پوری کرے گی۔فلسطین کی قیادت نے پاکستان کو ثالثی کی درخواست کی ہے جب تک فلسطینی تیار نہیں اسرائیل کو تسلیم نہیں کیا جاسکتا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہفتہ کو کراچی پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پرعلامہ طاہر الحسن، مولانا اسد ذکریا قاسمی،مولانا حسین درخواستی،مولانا فیض محمد نقشبندی،شیخ عطا الرحمن،احسان احمد حسینی اور دیگر بھی موجود تھے۔مولانا طاہر اشرفی نے کہا کہ مولانا عادل خان شہید کا قتل بہت بڑا سانحہ ہے۔مولانا عادل خان صاحب کو سیکیورٹی کیوں نہیں دی گئی۔اس کے اسباب میں جو بتایا گیا ہے اس میں کوتاہی ہوئی ہے۔اس کی تحقیقات ہونی چاہیے۔سندھ حکومت کوتاہی کے مرتکب افراد کے خلاف کاروائی کرے۔ حکومت سے جو معلومات حاصل ہوئی ہیں اس کے مطابق بہت جلد مولانا عادل خان شہید کے قاتل گرفت میں ہونگے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کا اطلاعات موصول ہوئی تھیں کہ شیعہ سنی فسادات کرانے کی سازش کی جارہی ہے۔توہین اور تکفیر کے 80 فیصد ملزمان گرفتار ہیں۔جو رہ گئے ہیں انہیں بھی گرفتار کیا جائے گا۔پاکستان علما کونسل کے ضابطہ اخلاق پیام پاکستان پر سب نے دستخط کیے۔پاکستان میں فسادات کی سازشوں کو ناکام بنایا ہے اور آئندہ بھی بنائیں گے۔ہمارا تمام فقہ کے علماسے رابطہ ہے۔انہوں نے کہا کہ کراچی میں مفتی تقی عثمانی، علامہ شہنشاہ نقوی سمیت دیگر علما فرنٹ پر ہیں جن میں مولانا عادل خان بھی شامل تھے۔وزیر اعظم سے بات ہوئی ہے۔ پورے پاکستان میں اکابرین کی حفاظت کے اقدامات کیے جائیں گے۔جو حکومت کرسکتی ہے وہ کرے گی اور جو وہ خود کرسکتے ہیں وہ کریں۔انہوں نے کہاکہ کچھ شر پسند عناصر ملک کے خلاف سازش کررہے ہیں۔مذہبی منافرت پھیلانے کی کوشش کی جارہی ہے۔سیکیورٹی فورسز کے جوان چند روز قبل شہید ہوئے ہیں۔دشمن کا نشانہ پاکستان ہے وہ ڈالر خرچ کررہے ہیں۔ان کی کوشش ہے کہ عوام اور فوج کو آمنے سامنے کھڑا کیا جائے۔مولانا طاہر اشرفی نے کہا کہ ہمارے اسلامی اور عرب دنیا سے تعلقات بہت اچھے ہیں۔فلسطین کے معاملے پاکستان اورعرب دنیا ایک پیج پر ہیں۔فلسطین کی قیادت نے پاکستان کو ثالثی کی درخواست کی ہے جب تک فلسطینی تیار نہیں اسرائیل کو تسلیم نہیں کیا جاسکتا۔صرف پاکستان اور سعودی عرب کے اسرائیل سے تعلقات نہیں ہیں۔انہوں نے کہا کہ جو لوگ ملک میں فرقہ واریت کو ہوا دینا چاہتے ہیں  و ہ چاہتے ہیں کہ عوام کو فوج اور اسلام سے دور کیا جائے۔ پاکستان کے عوام ان سازشوں کو ناکام بنادے گی۔انہوں نے کہا کہ میں نجومی نہیں ہوں کہ بتا سکوں کہ حکومت دسمبر میں ختم ہوجائے گی۔ہم سمجھتے ہیں موجود حکومت 5 سال پورے کرے گی۔انہوں نے کہا کہ مہنگائی اور امن و امان سب سے اہم مسئلہ ہے۔وزیراعظم کی پہلی ترجیح ہے کہ  ان کو حل کیا جائے۔ ریاست مدینہ بنانا اکیلے عمران خان کاکام نہیں ہے۔سب کو مل کر پاکستان کو ریاست مدینہ بنانے کے لیے اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کی جانب سے مہنگائی کو کنٹرول کرنے کے حوالے سے جلد اہم اعلان بھی متوقع ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -