سندھ کے جزیروں پر  وفاق کےمبینہ   قبضے کے خلاف سندھ ایکشن کمیٹی کی احتجاجی ریلی

سندھ کے جزیروں پر  وفاق کےمبینہ   قبضے کے خلاف سندھ ایکشن کمیٹی کی احتجاجی ...
سندھ کے جزیروں پر  وفاق کےمبینہ   قبضے کے خلاف سندھ ایکشن کمیٹی کی احتجاجی ریلی

  

عمرکوٹ(سید ریحان شبیر)  سندھ کے جزیروں پر  وفاق کےمبینہ   قبضے کے خلاف سندھ ایکشن کمیٹی کے جانب سے موتی چوک سے پریس کلب تک ریلی نکالی گئی جس میں ایس یو پی، ایس ٹی پی، جسقم بی، جسقم ای، عوامی تحریک، فشر فوک فورم، جی یو آئی اور دوسری جاعتوں کے رہنمائوں اور کارکنوں نےشرکت کی ۔ ریلی سےخطاب کرتے ہوئے سندھ ایکشن کمیٹی کے رہنماؤں  جمن دربدر، حاجی ساند، مہر علی سموں، روشن منگریو، رمضان خاصخیلی، رمضان ملاح، ذوالفقار دلوانی، ذوالفقار مری، روپلو چولیانی، مولانا عمران کمبار، اوردیگر مقررین کاکہناتھاکہ  کے سندھ کے معدنی وسائل اور سندھ کےجزیروں پے مبینہ  قبضہ کی کوشش  چھ کروڑ سندھیوں کےحقوق پرحملہ ہے سندھ کےجزیروں کے حوالےسے  ہم صدارتی آرڈیننس کو مکمل طور پرمسترد کرتے ہیں وفاقی حکومت کے ایسے فیصلوں کی سخت الفاظوں میں مذمت  کرتے ہیں پ پ سندھ کے جزیرہ بیچ کر اب اپنے پارٹی ورکروں کو کرپشن سے بچانے کے لیے چلا رہی ہے سندھ کارڈ استعمال کر رہی ہے فنکشنل لیگ کی خاموشی سمجھ سے   بالاترہےمقررین کاکہناتھاکہ ایسا    محسوس ہورہا کے مسلم لیگ فنکشنل  سندھ سے مخلص نہیں  ہے وفاقی حکومت کی اتحادی جماعت ہے۔ اس موقع پر انہوں کا مزید کہنا تھا  کہ یکم نومبر کو سندھ ایکشن کامیٹی کی جانب سے لگنے والے دھرنے  میں سارے سندھی مل کر ان کٹھ پتلی حکومت کو بتاٸیں گی کے سندھ دھرتی  ہماری ماں  ہے اور اس کے جزیرے اور معدنی وسائل  ہم چھ لاکھ سندھیوں کی سندھ دھرتی کی ملکیت ہے جس کا ایک انچ  ٹکڑا سندھ کے غداروں کو نہیں  دیں گے-

مزید :

علاقائی -سندھ -عمرکوٹ -