ہم پرانے غدار ہیں،اب تو سرٹیفکیٹ دیمک کھا چکی:سرداراخترمینگل کاخطاب

ہم پرانے غدار ہیں،اب تو سرٹیفکیٹ دیمک کھا چکی:سرداراخترمینگل کاخطاب
ہم پرانے غدار ہیں،اب تو سرٹیفکیٹ دیمک کھا چکی:سرداراخترمینگل کاخطاب

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)سربراہ بلوچستان عوامی پارٹی سردار اختر مینگل نے کہا ہے کہ ہمیں 1947سے غدار قراردیا جاچکاہے،ہم پرانے غدار ہیں،بار بار آئین توڑنے والوں کو محب وطن قراردیاجاتاہے۔

کراچی باغ جناح میں جاری پی ڈی ایم کے جلسے عام سے خطاب کرتے ہوئے بلوچستان عوامی پارٹی کے سربراہ سردار اختر مینگل نے کہا ہے کہ ہمیں 1947سے غدار قراردیا جاچکاہے ،اب توہمارے غداری کے سرٹیفکیٹ دیمک کھا گئی ہے، آپ لوگ نئے نئے غدار ہوئے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ حقوق کی جدوجہدکرنے والوں پر غداری کے ہی الزام لگتے ہیں۔ یہاں وہی محب وطن ہیں وہی ہیں جو مارشل لا لگاتے رہے ہیں، یا بوٹ چاٹ کر حکومت کرتے ہیں۔انہوں نے کہا خطاب کے دوران سوال کرتے ہوئے کہا کہ کیا ملک بناتے وقت ہم سے جمہوری ملک کا وعدہ نہیں کیا گیا تھا؟ہمارے ساتھ عدلیہ کی آزادی، پارلیمنٹ کی بالا دستی، میڈیا کی آزادی کا وعدہ کیا گیا تھا لیکن یہ کیا جمہوریت ہے ایک منتخب وزیراعظم کو پھانسی دے دی گئی۔ ایک وزیراعظم کو ہٹا کر جلا وطن کر دیا گیا۔ ان کا کہنا تھا کہ عوام اپنے بچوں کے تحفظ کی بھیک مانگ رہے ہیں،جن لوگوں نے باہرسے ڈالرکردوسروں کی جنگ میں خود کو دھکیل کر معصوم لوگوں کے خون سے اپنے ہاتھ رنگے، ان لوگوں کو حساب دینا ہوگا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اب یہ سندھ اور بلوچستان کے جزائرپر بھی قبضہ کرنا چاہتے ہیں، ہم کسی کو بلوچستان ک جزائر پر قبضہ نہیں کرنے دیں گے۔ 

مزید :

قومی -