پی ڈی ایم کا مہنگائی کیخلاف کل سے احتجاجی مظاہروں کا اعلان 

  پی ڈی ایم کا مہنگائی کیخلاف کل سے احتجاجی مظاہروں کا اعلان 

  

اسلام آباد، لاہور (نمائندہ خصوصی، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)اپوزیشن جماعتوں پر مشتمل اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) نے مہنگائی کے خلاف ملک بھر میں احتجاجی مظاہروں کا اعلان کردیا۔اپوزیشن اتحاد کے رہنماؤں کے درمیان ملاقات ہوئی جس میں اہم فیصلے کیے گئے۔ ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو میں اتحاد کے سربراہ مولا نا فضل الرحمان کا کہنا تھاکہ ملک میں آئے روز مہنگائی کے بم گرائے جارہے ہیں، غریب خودکشی پر مجبور ہوگیا ہے، اس صورتحال میں پی ڈی ایم ایک مؤثراقدام کررہی ہے۔انہوں نے مہنگائی کے خلاف تحریک کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ مہنگائی کے خلاف ملک بھر میں بھرپور تحریک شروع کی جائے گی اور ہم فوری طور پر اگلے دوہفتوں کیلئے  احتجاجی مظاہروں کااعلان کرر ہے ہیں۔ان کا کہنا تھاکہ 12ربیع الاول کی تقریبات کے بعد ہر ضلعی ہیڈکوارٹر میں مظاہرے ہوں گے لہٰذا قوم سے اپیل ہے کہ ان مظاہروں اور ریلیوں میں بھرپور شرکت کریں۔سربراہ اتحاد کا کہنا تھاکہ پی ڈی ایم عوام کے شانہ بشانہ ساتھ کھڑے ہونے کیلئے تیار ہے، مہنگائی سے نجات دلانے کیلئے عام آدمی کو نکلنا ہوگا۔ان کا کہنا تھاکہ آج پی ڈی ایم کاسربراہ اجلاس ہے جس میں اہم فیصلے کئے جائیں گے۔حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے فضل الرحمان کا کہنا تھاکہ 3 سال پہلے قرضوں کا حجم 25 ہزار ارب تھا اب 45 ہزار ارب پرپہنچ گیا، تین سال پہلے جی ڈی پی گروتھ 5 فیصد تھی اب منفی میں ہے، حکومت آئی ایم ایف کے مفادات کا تحفظ کررہی ہے لیکن ہم نے عوام کے مفادات میں نکلنے کا فیصلہ کیا ہے۔ان کا کہنا تھاکہ چارماہ میں حکومت 8 بارپیٹرول کی قیمتوں میں اضافہ کر چکی، یہ ایک کرپٹ ترین حکومت ہے، یہ حکومت مکمل ناکام ہوچکی، یہ حکومت عوام کی نہیں، آئی ایم ایف کی لگتی ہے۔اس سے قبل مولانا فضل الرحمن نے مسلم لیگ ن کے صدر اور اپوزیشن لیڈر شہباز شریف سے ٹیلی فون پر رابطہ کیا جس میں مہنگائی کیخلاف ملک گیر تحریک چلانے کا فیصلہ کیا گیا شہبازشریف اور مولانا فضل الرحمان نے قوم کو مسائل اور معاشی تباہی سے نجات دلانے کیلئے سڑکوں پر آنے پر اتفاق کیا۔شہبازشریف نے ملک میں بدترین مہنگائی کے خلاف بھرپور تحریک چلانے کے فیصلے کی توثیق کی جبکہ قائدین نے ملک کی دیگر اپوزیشن جماعتوں کو بھی ساتھ ملانے کا فیصلہ کیا۔دونوں رہنماؤں نے ملک بھر میں احتجاج، احتجا جی ریلیاں اور مارچ کرنے کی بات پر اتفاق کیا، پاکستان مسلم لیگ(ن) کے صدر شہباز شریف نے آئی ایم ایف سے مذاکرات میں ناکامی پر قیمتوں میں اضافہ واپس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ قوم کو بتایا جائے بجلی،گیس،پٹرول اور چینی کی قیمت پر مذاکرا ت کیوں ناکام ہوئے، عوام مہنگائی سے لہولہان ہیں ان کا معاشی قتل بند کیا جائے۔ شہباز شریف نے کہا حکومت نے آئی ایم ایف کی تمام شرائط پہلے مان لیں پھر بھی مذاکرات ناکام ہوگئے، یہ ہے حکومت کی حکمت عملی؟ تین سال آئی ایم ایف کی اندھی تابعداری اور عوا م کو مہنگائی سے لہولہان کردیا اور نتیجہ صفر نکلا۔وزیر خزانہ کو سینیٹر بنوا نے میں عمران نیازی نے جتنی دلچسپی لی، شوکت ترین نے بھی اتنی ہی دلچسپی سے مذاکرات کئے۔ حکومت نے عوام کو دھوکہ دیا اور آئی ایم ایف کو بھی چکر دیا، تین سال سے عوام کا معاشی قتل جاری ہے۔ بجلی، گیس، پٹرول آٹا اور چینی کی قیمت اور آئی ایم ایف سے مذاکرات کیوں ہوئے۔ قوم کو بتایا جائے نواز شریف کی قیادت میں پا کستا ن مسلم لیگ (ن) نے 2015 میں آئی ایم ایف پروگرام مکمل کیا تھا، ان پر عمران نیازی تنقید کیا کرتے تھے اور آئی ایم ایف نہیں جاؤں گا، خود کشی کر لوں گا  کے نعرہ لگاتے تھے۔ اس سے قبل مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف پارٹی کے قائد اور سابق وزیر اعظم نواز شریف سے بھی ٹیلی فون پر رابطہ کیا اور مہنگائی کیخلاف احتجاج کے حوالے سے ان سے مشاورت کی، مسلم لیگ ن کے اعلامیے کے مطابق نواز شریف نے بھی پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتوں میں حالیہ اضافے کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا  اور پارٹی کو مہنگائی کیخلاف شدید احتجاج کی ہدایت کی۔

پی ڈی ایم

مزید :

صفحہ اول -