کشمیریوں کے خون کے پیاسے مودی نے اپنی سالگرہ پر عالمی ریکارڈ بنادیے

کشمیریوں کے خون کے پیاسے مودی نے اپنی سالگرہ پر عالمی ریکارڈ بنادیے
کشمیریوں کے خون کے پیاسے مودی نے اپنی سالگرہ پر عالمی ریکارڈ بنادیے

  

نئی دلی (نیوز ڈیسک) مقبوضہ کشمیر میں مودی حکومت کے مظالم جاری ہیں اور ہر روز ظلم کے نئے ریکارڈ بنتے ہیں جنہیں کسی کتاب کا حصہ نہیں بنایا جاتا لیکن بھارتی وزیر اعظم نریندرا مودی نے اپنی سالگرہ پر تین ورلڈ ریکارزڈ بنادیے جنہیں باقاعدہ طور پر گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں درج بھی کرلیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جولائی سے اب تک کشمیر میں بھارتی دہشتگرد فوج نے درندگی کے تمام ریکارڈ توڑتے ہوئے 104 کشمیریوں کو شہید کردیا ہے جبکہ ہزاروں زخمی ہیں اور پیلٹ گن کے استعمال سے متعددنوجوان ہمیشہ کیلئے اپنی آنکھوں کی بینائی سے محروم ہوچکے ہیں۔ کشمیر میں جاری مظالم کے دوران 17 ستمبر کو بھارتی وزیر اعظم نریندرا مودی نے شاہانہ انداز میں اپنی 66 ویں سالگرہ منائی اور تین ورلڈ ریکارڈ قائم کردیے۔

نریندرا مودی کی سالگرہ کے موقع پر پہاڑ کی شکل میں پہاڑ جتنا 3750 کلوگرام کا کیک بنایا گیا جو ورلڈ ریکارڈ تو نہ بنا سکا تاہم بھارتی حکومت کی بے حسی کھول کر سامنے لے آیا۔ مودی کی سالگرہ کے موقع پر احمد آباد میں سکول کے طالبعلموں کو اکٹھا کرکے ان سے بھارت کا نقشہ بنوا کر ورلڈ ریکارڈ بنایا گیا جبکہ 989 لوگوں نے 30 سیکنڈز میں ہوا میں لالٹینیں چھوڑ کر بھی ورلڈ ریکارڈ قائم کیا۔

گجرات میں ہونے والی تقریب کے دوران مودی کی سالگرہ کیلئے ایک ہزار معذور افراد کو وہیل چیئرز سمیت اکٹھا کیا گیا ۔ معذور افراد نے زعفرانی اور سفید رنگ کے لباس زیب تن کر رکھے تھے جبکہ انہون نے ” ہیپی برتھ ڈے نریندرا مودی“ کا لوگو بنایا جس پر اس انوکھے کارنامے کو بھی گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ کا حصہ بنالیا گیا۔

مزید : بین الاقوامی