اشرف غنی کو فضل اللہ کیخلاف تمام ثبوت دئیے پھر بھی کاروائی نہیں کی گئی : خواجہ آصف

اشرف غنی کو فضل اللہ کیخلاف تمام ثبوت دئیے پھر بھی کاروائی نہیں کی گئی : ...

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیر دفاع خواجہ محمد آصف نے کہا ہے کہ افغان مہاجرین کے جا نے کے بعددہشتگردوں سے تعاون کاالزام لگاتوجوابدہ ہونگے،ملا فضل اللہ کیخلاف تمام شواہدافغان صدرکے حوالے کیے ہیں۔جیو نیوز کے پروگرام ’’جرگہ‘‘میں گفتگو کرتے ہوئے وزیر دفاع خواجہ محمد آصف نے کہا ہے کہ افغان مہاجرین کے جا نے کے بعددہشتگردوں سے تعاون کاالزام لگاتوجوابدہ ہونگے،ملا فضل اللہ کیخلاف تمام شواہدافغان صدرکے حوالے کیے ہیں۔افغان حکومت نے فضل اللہ کیخلاف کوئی کارروائی نہیں کی ،ہمیں افغانستان کی کسی ملک سے دوستی پر اعتراض نہیں ہے،افغان صدر اپنے اقتدار کا توازن برقرار رکھنے کے لیے ہاتھ پاؤں ماررہے ہیں،افغان صدر کو اندرونی مسائل کا سامنا ہے۔انہوں نے کہا ہے کہ افغانستان اگرہماری تجارت کے راستے روکتاہے ہمارے پاس متبادل روٹ موجود ہیں،افغانستان کوواہگہ کے را ستے بھارت تجارت کی اجازت دے رکھی ہے،موجودہ حالات میں ہم بھارت کویہ سہولت نہیں دے سکتے،افغان صدراپنے مہاجرین کواپنے وطن واپس لیکر جائیں۔انہوں نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیرسائیڈ پررکھ کر بھارت سے مذاکرات نہیں کیے جاسکتے،کشمیر کا مسئلہ ہمارا ایک کلیدی مسئلہ ہے،دشمنیوں میں ابدیت نہیں ہونی چاہیے،بھارت ازلی دشمن ہے، خواہش ہے کہ ابدی نہ ہو۔انہوں نے کہا ہے کہ قادری صاحب اپنے وطن چلے گئے ہیں،انکی شہریت کینیڈین ہے، سیکرٹری دفاع کی تقرری ایک مہینہ قبل کی گئی ،وزیراعظم آفس اپنا آئینی کردار بھرپور طریقے سے ادا کررہاہے۔

مزید : صفحہ اول