خیبر ایجنسی ،لوڈشیڈنگ کیخلاف پی ٹی آئی کے کارکنوں کا مظاہرہ

خیبر ایجنسی ،لوڈشیڈنگ کیخلاف پی ٹی آئی کے کارکنوں کا مظاہرہ

خیبر ایجنسی (بیورورپورٹ) خیبر ولی خیل میں پی ٹی آئی کے کارکنوں کا ظالمانہ لوڈ شیڈنگ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ، شاہراہ بلاک کر دی، بجلی کی لوڈ شیڈنگ نے روزمرہ زندگی کو متاثر کیا ہے ،بائیس گھنٹے لوڈ شیڈنگ سمجھ سے بالاتر ہے ، انتظامیہ مسائل حل کرنے میں دلچسپی نہیں لے رہی، لوڈ شیڈنگ ختم نہیں کی گئی تو احتجاج کا دائرہ وسیع کرنے مجبور ہونگے ، عبدالحکیم آفریدی و دیگر کا مظاہرین سے خطاب۔ پاکستان تحریک انصاف کے کارکنوں نے لنڈی کوتل کے علاقے خیبر ولی خیل میں بجلی کی ظالمانہ اور ناروا لوڈ شیڈنگ کے خلاف احتجاج اور مارچ کیا جس میں سینکڑوں مظاہرین نے شرکت کر کے واپڈا ٹیسکو اور انتظامیہ کے خلاف نعرے بازی کی مظاہرین نے آدھے گھنٹے تک شاہراہ بند کر کے ٹریفک کی روانی معطل کر دی مظاہرے میں سینکڑوں مقامی افراد نے شرکت کی جس کی قیادت پی ٹی آئی کے مقامی رہنماء عبدالحکیم آفریدی کر رہے تھے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے پی ٹی آئی کے رہنماء عبدالحکیم آفریدی نے کہا کہ خیبر لنڈی کوتل میں بجلی کی بندش کو معمول بنادیا گیا ہے اور بائیس گھنٹے سے زیادہ لوڈ شیڈنگ کرنا ظالمانہ اقدام ہے جس کی مذمت کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ پورے پاکستان میں لوڈ شیڈنگ یا تو ختم کر دی گئی ہے اور یا پھر اس میں بہت کمی لائی گئی ہے لیکن بدقسمت قبائلی عوام آج بھی لوڈ شیڈنگ کے عذاب سے دوچار ہیں جو ایک لمحہ فکریہ ہے انہوں نے کہا کہ اگر حکومت اور پولیٹیکل انتظامیہ نے ظالمانہ اور غیر منصفانہ لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ نہیں کیا تو تحریک انصاف قبائلی عوام کو سڑکوں پر لاکر بھر پور احتجاجی تحریک چلانے پر مجبور ہوگی انہوں نے کہا کہ پولیٹیکل انتظامیہ بھی عوامی مسائل کے حل میں دلچسپی نہیں لے رہی اس لئے مسائل بڑھتے چلے گئے ہیں عبدالحکیم آفریدی نے کہا کہ لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ بائیس گھنٹے سے تجاوز کر چکی ہے جس کی وجہ سے روزمرہ کی زندگی متاثر ہو چکی ہے انہوں نے مذید احتجاجی مظاہروں کی دھمکی دی ہے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر