مہمند ایجنسی، امبار خود کش دھماکہ میں 4 گھرانے مکمل طور پر اُجڑ گئے

مہمند ایجنسی، امبار خود کش دھماکہ میں 4 گھرانے مکمل طور پر اُجڑ گئے

مہمند ایجنسی ( نمائندہ پاکستان ) مہمند ایجنسی، امبار خود کش دھماکہ میں 4 گھرانے مکمل طور پر اُجڑ گئے۔ رنڑا گل نامی شخص کے تین نوجوان بیٹے وہاب، شہاب اور نعیم، غفار کے دو بچے رضوان اور جمشید، اول گل کے جواں سالہ بیٹے عرفان اور حضرت گل، لعل جان کا نوجوان بیٹا ظاہر شاہ اپنے چھوٹے بھائی داؤد شاہ کے ہمراہ نماز جمعہ پڑھنے گئے کہ خونریز دھماکے کا شکار بن گئے۔ تفصیلات کے مطابق جمعہ کے روز لوئر مہمند تحصیل امبار پائی خان مسجد میں خودکش دھماکے کی تفصیلی رپورٹ جاری کر دی گئی ہے۔ جس کے مطابق چار غریب گھرانے مکمل طور پر اُجڑ گئے۔ کیونکہ مقامی شخص رنڑا گل کے تین جونوان بیٹے 22 سالہ وہاب، 20 سالہ نعیم اور 17 سالہ شہاب کے ایک ساتھ موت نے والدین کی کمر توڑ دی۔ اسی طرح اول گل نامی باشندے کے دو بیٹے 18 سالہ عرفان اور 16 سالہ حضرت گل بد قسمت غفار خان کے دو کم عمر بیٹے 12 سالہ رضوان اور 9 سالہ جمشید اور لعل جان نامی شخص کا 12 سالہ بیٹا اپنے بڑے بھائی 22 سالہ ظاہر شاہ کے ساتھ اہتمام کے ساتھ حسب معمول نماز جمعہ پڑنے گئے کہ بیچ نماز میں دھماکے سے موقعہ پر زندگی کی بازی ہار گئے۔ نوجوانوں اور بچوں کی جاں بحق ہونے پر عزیز و اقارب کے ساتھ تمام علاقہ سوگ میں ڈوبا ہوا ہے۔ جبکہ مذکورہ جوانوں اور بچوں کا ہمیشہ کیلئے بچھڑ جانے پر والدین اور قریبی رشتہ داروں پر عشی کے دورے پڑ رہے ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ اول