ڈاک خانوں کے ذریعے گاڑیوں کی ٹوکن ٹیکس وصولی ختم کرنے کا فیصلہ لیکن اب یہ کس طرح لی جائے گی ؟ گاڑی مالکان کیلئے اہم معلومات

ڈاک خانوں کے ذریعے گاڑیوں کی ٹوکن ٹیکس وصولی ختم کرنے کا فیصلہ لیکن اب یہ کس ...
ڈاک خانوں کے ذریعے گاڑیوں کی ٹوکن ٹیکس وصولی ختم کرنے کا فیصلہ لیکن اب یہ کس طرح لی جائے گی ؟ گاڑی مالکان کیلئے اہم معلومات

  


لاہور (ویب ڈیسک) محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن نے ڈاکخانوں سے ٹوکن ٹیک سکی وصولی کا کام ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ آئندہ ماہ سے لاہور سمیت پنجاب بھر میں موٹرسائیکل رکشہ وین اور گاڑیوں سمیت دیگر ٹرانسپورٹ کے ٹوکن ٹیکس کی وصولی صرف اور صرف محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کی موٹر رجسٹریشن اتھارٹی کے دفاتر میں ہی کی جائے گی۔ روزنامہ ایکسپریس کے مطابق اس سلسلے میں محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن نے سمری تیار کرکے پنجاب حکومت کو بھجوادی ہے اور پاکستان پوسٹ ماسٹر جنرل کو بھی تحریری طور پر آگاہ کردیا گیا ہے۔ ڈائریکٹر جنرل ایکسائز زاہد حسین کا کہنا ہے کہ محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کا تمام سسٹم کمپیوٹرائز ہوچکا ہے اور آن لائن ادائیگی بھی جلد شروع کردی جائے گی۔ ڈاکخانوں میں یہ نظام موجود نہیں ہے اور سارا کام مینول طریقے سے ہورہا تھا جس کی وجہ سے عوام کے ساتھ ساتھ محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کو بھی زیادہ مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا تھا۔ اکثر گاڑیوں کے ٹوکن ٹیکس کا ریکارڈ ہی نہیں ملتا یا تاخیر سے ملنے کے باعث محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کے موٹر وہیکل ڈیٹا میں اپ گریڈ ہی نہیں ہوتا۔ ڈاکخانے میں لگے ٹوکن ٹیکس میں کروڑوں روپے کے فراڈ بھی سامنے آچکے ہیں۔ ایک ماہ قبل باغبانپورہ میں ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن آفس میں چھاپہ مار کر ڈاکخانوں میں جمع کرائے گئے ٹوکن ٹیکس فراڈ کو پکڑا تھا۔ اب تک کی تحقیقات کے مطابق 10 کروڑ روپے سے زائد کا فراڈ سامنے آیا ہے اور ابھی تحقیقات مکمل نہیں ہوئی۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور


loading...