”ایسی وباء جو 36 گھنٹوں میں دنیا میں پھیلے گی اور 8 کروڑ لوگوں کو ہلاک کردے گی “ ڈبلیو ایچ او نے خطرے کی گھنٹی بجادی

”ایسی وباء جو 36 گھنٹوں میں دنیا میں پھیلے گی اور 8 کروڑ لوگوں کو ہلاک کردے گی ...
”ایسی وباء جو 36 گھنٹوں میں دنیا میں پھیلے گی اور 8 کروڑ لوگوں کو ہلاک کردے گی “ ڈبلیو ایچ او نے خطرے کی گھنٹی بجادی

  


نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) 1918ءمیں فلو کی طرح کی ایک وباءدنیا میں پھیلی تھی اور 5کروڑانسانوں کو نگل گئی۔ اب ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے سابق سربراہ نے اس سے بھی خوفناک وباءپھیلنے کی وارننگ دے دی ہے جس کے بارے میں ان کا کہنا ہے کہ یہ اس قدر خوفناک ہو گی کہ دنوں میں 8کروڑ سے زائد لوگوں کو لقمہ اجل بنا ڈالے گی۔ یہ بھی فلو کی طرح کی وباءہو گی جو ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے سابق سربراہ کے مطابق محض 36گھنٹوں میں پوری دنیا میں پھیل جائے گی۔

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے سابق سربراہ کی قیادت میں ’دی گلوبل پری پیئریشن مانیٹرنگ بورڈ‘ کے ماہرین نے ایک رپورٹ تیار کی ہے جس میں یہ خوفناک انکشافات کیے گئے ہیں۔ اس رپور ٹ میں بتایا گیا ہے کہ لگ بھگ ایک صدی قبل سپینش فلو پینڈیمک نے ایک تہائی دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لیا تھا اور 5کروڑ لوگ موت کے گھاٹ اتر گئے تھے۔ اب یہ نئی بیماری اس سے کہیں زیادہ تیزی کے ساتھ دنیا میں پھیل سکتی ہے اور اس سے زیادہ لوگ اس کے باعث موت کے منہ میں جانے کا امکان ہے۔

اس گروپ نے اپنی ’ اے ورلڈ ایٹ رسک‘ (A world at risk)نامی رپورٹ میں مزید بتایا ہے کہ ”یہ خطرہ فرضی نہیں، حقیقی ہے اور دنیا کو اسے انتہائی سنجیدگی سے لینا ہو گا۔ یہ وباءپھیلی تو کم از کم 8کروڑ سے زائد لوگ مر جائیں گے اور دنیا کی معیشت تباہ ہو جائے گی۔ “ دیگر عالمی طبی ماہرین کا بھی کہنا ہے کہ ” دی گلوبل پری پیئریشن مانیٹرنگ بورڈکے ماہرین کی رپورٹ چشم کشا ہے۔ بدقسمتی سے اس رپورٹ پر عالمی رہنماﺅں کا جس طرح کا ردعمل آنا چاہیے تھا وہ نہیں آیا۔ اگر اس خطرے کو سنجیدہ نہ لیا گیا تو دنیا بڑی تباہی سے دوچار ہو جائے گی۔“

مزید : تعلیم و صحت


loading...