اگر کنڈیکٹ پر استعفیٰ دینا پڑا تو سارے وزراءکو استعفیٰ دینا پڑے گا ، اسلام آباد ہائیکورٹ کے سانحہ تیز گام ایکسپریس کی تحقیقات کیلئے درخواست پر ریمارکس

اگر کنڈیکٹ پر استعفیٰ دینا پڑا تو سارے وزراءکو استعفیٰ دینا پڑے گا ، اسلام ...
اگر کنڈیکٹ پر استعفیٰ دینا پڑا تو سارے وزراءکو استعفیٰ دینا پڑے گا ، اسلام آباد ہائیکورٹ کے سانحہ تیز گام ایکسپریس کی تحقیقات کیلئے درخواست پر ریمارکس

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائیکورٹ نے سانحہ تیز گام ایکسپریس کی تحقیقات کیلئے دائر درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا، جسٹس محسن اختر کیانی نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ اگر کنڈیکٹ پر استعفیٰ دینا پڑا تو سارے وزراءکو استعفیٰ دینا پڑے گا ۔

نجی ٹی وی سما نیوز کے مطابق اسلام آبادہائیکورٹ میں سانحہ تیز گام ایکسپریس کی تحقیقات کیلئے دائر درخواست پر سماعت ہوئی ، عدالت نے کہاکہ وزارت داخلہ ، پولیس اور ریلوے اپنی انکوائری کررہی ہے ،وکیل درخواست گزار نے کاکہاکہ وزیر ریلوے کا حادثے پر جو کنڈکٹ رہا اس پر انہیں مستعفی ہونا چاہئے تھا ، جسٹس محسن اختر کیانی نے کہاکہ اگر کنڈیکٹ پر استعفیٰ دینا پڑا تو سارے وزراءکو استعفیٰ دینا پڑے گا ۔استعفیٰ اخلاقی بنیادو ںپر دیا جاتا ہے پاکستان میں ابھی اخلاقیات اس سطح تک پہنچی نہیں ۔

جسٹس محسن اخترکیانی نے کہاکہ موٹروے زیادتی کیس کی ساری تحقیقات میڈیا پر ہی ہو رہی ہیں ، پوراپاکستان ہی موٹروے کیس کا تفتیشی افسر بنا ہوا ہے ،جسٹس محسن اختر کیانی نے فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -