کتنے فیصدمرد جنسی روبوٹس کیساتھ تعلق قائم کرنا چاہتے ہیں؟ تازہ تحقیق میں ایسا انکشاف کہ انسان دنگ رہ جائے 

کتنے فیصدمرد جنسی روبوٹس کیساتھ تعلق قائم کرنا چاہتے ہیں؟ تازہ تحقیق میں ...
کتنے فیصدمرد جنسی روبوٹس کیساتھ تعلق قائم کرنا چاہتے ہیں؟ تازہ تحقیق میں ایسا انکشاف کہ انسان دنگ رہ جائے 

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) مغربی معاشروں میں جنسی روبوٹ کی لت جڑیں پکڑ رہی ہے، جسے ماہرین انسانیت کے لیے سنگین خطرہ قرار دے رہے ہیں کہ جنسی روبوٹس کی لت عام ہونے سے مردوخواتین باہم دلچسپی کھو دیں گے اور بچے پیدا نہ ہونے کے سبب انسانیت خاتمے سے دوچار ہو جائے گی۔اب ایک سروے میں کچھ ایسے نتائج سامنے آ گئے ہیں کہ ماہرین کا یہ خدشہ درست ثابت ہوتا نظر آنے لگا ہے۔ 

ڈیلی سٹار کے مطابق یہ سروے مصنوعی ذہانت کی کمپنی ٹیڈیو (Tidio)کی طرف سے کرایا گیا ہے جس میں حیران کن طور پر 42فیصد لوگوں نے اعتراف کیا ہے کہ وہ جنسی روبوٹ کے ساتھ تعلق قائم کرنا چاہتے ہیں۔ اس سروے میں ماہرین نے 1200مردوخواتین سے سوالات پوچھے۔ مردوں میں جنسی روبوٹس میں جنسی رغبت کی شرح خواتین کی نسبت زیادہ پائی گئی۔ مردوں میں سے 48فیصد نے کہا کہ وہ جنسی گڑیاﺅں کے ساتھ تعلق قائم کرنا چاہتے ہیں جبکہ خواتین میں یہ شرح 33فیصد پائی گئی۔ سروے میں شامل 39فیصد مردوخواتین کا کہنا تھا کہ وہ جنسی روبوٹ کے ساتھ رومانوی تعلق قائم کر سکتے ہیں اور اس کی محبت میں گرفتار ہو سکتے ہیں۔

تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر ڈیوڈ لیوی کا کہنا تھا کہ ”ایک بار جب جنسی روبوٹس انسانوں کی طرح سننے اور بولنے کے قابل ہو جائیں گے، انسان بھی انہیں انسانوں کی طرح ہی اپنانے لگیں گے اور ان کی محبت میں گرفتار ہونے لگیں گے۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -