صدر مملکت نے وفاقی محتسب فیصلے کیخلاف دائرگیس کمپنی کی درخواست مسترد کردی 

صدر مملکت نے وفاقی محتسب فیصلے کیخلاف دائرگیس کمپنی کی درخواست مسترد کردی 

  

اسلام آباد (این این آئی)صدر عارف علوی نے سوئی ناردرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ کو غیر منصفانہ بل پر نظر ثانی کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے وفاقی محتسب کے فیصلے کے خلاف دائر گیس کمپنی کی درخواست مسترد کر دی جاری اعلامیہ کے مطابق صدر مملکت نے کہاکہ گیس کمپنی شہری سے بلاجواز بل، میٹر کی قیمت وصول کر کے بدانتظامی کی مرتکب ہوئی، گیس کمپنی نے پشاور کے شہری کو 44 ہزار روپے سے زائد کا بل بلاجواز چارج کیا صدر مملکت نے کہاکہ شہری کا گیس میٹر فائرنگ کے تبادلے کے نتیجے میں خراب ہوا، صارف کی کوئی غلطی نہیں، شکایت کنندہ نے اپنے میٹر کو نقصان کی ایف آئی آر بھی درج کرائی۔ عارف علوی نے کہاکہ یہ میٹر کو نقصان پہنچنے کا معاملہ ہے نہ کہ میٹر سے چھیڑ چھاڑ کا، گیس کمپنی کی رپورٹ میں بھی شہری کی جانب سے گیس معاہدے کی خلاف ورزی کا ذکر نہیں۔صدر مملکت نے کہاکہ شہری کی باضابطہ درخواست کے بعد کمپنی نے گیس میٹر تبدیل کیا، گیس کمپنی اوگرا قواعد و ضوابط کے مطابق گیس میٹر 5 دن کے اندر مقامی لیبارٹری کو بھیجنے میں ناکام رہی۔صدر مملکت نے کہاکہ میٹر ایک ماہ سے زائد عرصہ گزرنے کے بعد مقامی لیبارٹری کو بھیجا گیا، کمپنی کے پاس جرمانہ عائد کرنے کا اختیار نہیں، یہ ایک مجاز عدالت کا دائرہ کار ہے۔ عارف علوی نے کہاکہ میٹر کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کی مدت غیر معین ہونے پر صرف ایک سال تک کا بل وصول کیا جا سکتاہے، موجودہ معاملے میں میٹر کے نقصان کی مدت 20 دن متعین ہو چکی تھی۔صدر مملکت نے کہاکہ کمپنی نے اوگرا کے وضع کردہ قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی میں صارف کو زائد بل دیا، کمپنی بدانتظامی کی مرتکب ہوئی، سوئی ناردرن گیس کی درخواست مسترد کی جاتی ہے۔صدر مملکت نے کہاکہ کمپنی فیصلے کے 30 دنوں کے اندر وفاقی محتسب کو حکم کی تعمیل کی اطلاع دے۔ 

عارف علوی 

مزید :

صفحہ آخر -