ڈکیتی کے ملزم کی تحویل کے دوران ہلاکت، پولیس افسران کو نوکریوں سے ہاتھ دھو نا پڑگئے،  مثال قائم 

ڈکیتی کے ملزم کی تحویل کے دوران ہلاکت، پولیس افسران کو نوکریوں سے ہاتھ دھو نا ...
ڈکیتی کے ملزم کی تحویل کے دوران ہلاکت، پولیس افسران کو نوکریوں سے ہاتھ دھو نا پڑگئے،  مثال قائم 

  

فیصل آباد(آئی پی ایس)سی پی او عمر سعید ملک نے تھانہ ٹھیکریوالہ میں زیرحراست ڈکیتی کے ملزم کی ہلاکت پر دوران انکوائری گناہگارثابت ہونے پر ایس ایچ او ثاقب ریاض مہیس سمیت 3تھانیداروں کونوکری سے فارغ کردیا جبکہ مس گائیڈکرنے پر اے ایس آئی لیاقت علی کی تنزلی کرتے ہوئے ہیڈ کانسٹیبل اورہیڈ کانسٹیبل محمد عارف کو کانسٹیبل بنا دیا ۔

تفصیل کے مطابق سی پی او فیصل آباد عمر سعید ملک نے پولیس لائن میں منعقدہ اردل روم میں ناقص کارکردگی غفلت لاپرواہی کا مظاہرہ کرنیوالے افسران کو سزائیں سنا دی اور 24اگست کو تھانہ ٹھیکریوالہ میں ڈکیتی کے زیرحراست ملزم پرتشدد سے ہلاکت پر ایس پی انوسٹی گیشن کی سربراہی میں 4 رکنی کمیٹی تشکیل دیتے ہوئے فوری انکوائری کا حکم دیا تھا انکوائری رپورٹ میں قصوروار پائے جانے پر ایس ایچ او تھانہ ٹھیکریوالہ سب انسپکٹر ثاقب ریاض سسب انسپکٹر محمد عبداللہ چوکی انچارج خانوآنہ اے ایس آئی محمد فاروق کو محکمہ سے برخاست کرنیکا حکم دیدیا اور افسران کو مس گائیڈ کرنے پر اے ایس آئی لیاقت علی اورہیڈ کانسٹیبل محمد عارف کی ایک عہدہ تنزلی کے احکامات جاری کردیئے۔

سی پی او نے کہاکہ محکمہ پولیس کی بدنامی کا باعث بننے والے افسران وملازمین کی محکمہ میں کوئی جگہ نہیں ہے اور محکمہ پولیس میں سزاوجزاءکا عمل جاری رکھا جائیگا جبکہ اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرنیوالے پولیس افسران انعامات کے حقدار ہونگے جبکہ کرپشن اوراختیارات کا ناجائز استعمال کرنیوالے افسران کو کڑے محکمانہ احتساب کا سامنا کرنا پڑے گا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -فیصل آباد -