درجہ چہارم کی بھرتیوں سے متعلق درخواست پرفیصلہ جاری کردیاگیا

 درجہ چہارم کی بھرتیوں سے متعلق درخواست پرفیصلہ جاری کردیاگیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 
 لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ نے سکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ ملتان میں درجہ چہارم کی بھرتیوں سے متعلق درخواست پرفیصلہ جاری کردیا  عدالتی فیصلے میں مجموعی سیٹوں میں اقلیتی کوٹہ نہ رکھنے کے اقدام کوکالعدم قرار دے دیاگیا عدالت نے جنرل نشست کے علاوہ مخصوص کیٹیگریز میں اقلیتی کوٹہ کے نفاذ کا حکم بھی دیا مسٹرجسٹس محمد شان گل نے 26صفحات پر مشتمل تحریری فیصلہ جاری کردیا عدالتی فیصلے میں کہا گیاہے کہ جنرل نشستوں کے برعکس دیگر نشستوں پراقلیتی کوٹہ نہ رکھنا آئین کے منافی ہے،جنرل نشستوں کے علاوہ ہرکیٹیگری میں پانچ فیصد اقلیتی کوٹہ مختص ہونا قانون کا تقاضا ہے اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ ریاست کی ذمہ داری ہے 2017 ء کی مردم شماری کے مطابق پاکستان میں 3.8فیصد اقلیتیں آباد ہیں، آئین اور قائداعظم کے فرمودات کے برعکس پاکستان میں اقلیتیں آج بھی کم تر کام کرنے پرمجبور ہیں،قرآن وسنہ اور مدینہ کی ریاست میں بھی اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ کیا گیا،درخواست گزرا کامزید موقف تھا کہ سکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ نے درجہ چہارم کی 205بھرتیوں کا اشتہار دیا،درخواست گزار سیموئل لطیف نے اپلائی کیا،اتھارٹی نے جمرل نشستوں پرپانچ فیصد کوٹے کا اطلاق کیا،نائب قاصد، چوکیدار اور مالی کی مخصوص کیٹیگری کوکوٹہ سے نکال دیا،درخواست گزار کوکوٹہ سے نکالنے پرنوکری سے محروم ہونا پڑا،اقلیتی کوٹے پرعمل درآمد نہ ہونا آئین، قوانین اور اشتہار میں دئیے گئے قواعد کی خلاف ورزی ہے۔ 
فیصلہ جاری 

مزید :

صفحہ آخر -