ملتان،بچہ بد فعلی کے بعد قتل،بارہ گھنٹے بعد ملزم ٹریس

ملتان،بچہ بد فعلی کے بعد قتل،بارہ گھنٹے بعد ملزم ٹریس

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 
 ملتان) وقا ئع  نگار)سی پی او ملتان خرم شہزاد حیدر نے کہا ہے کہ 16 اپریل کو چاہ میہڑ والہ سے گم ہونے والے بچے احمد کی لاش ملنے کے بارہ گھنٹوں کے اندر قاتل کو ٹریس کر کے گرفتار کر لیا۔سی پی او نے پولیس لائن میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ  پولیس کو رات 9 بجے اطلاع ملی تو سرچنگ شروع کی گئی اور تھانہ نیو ملتان نے مقدمہ نمبر  432/22 درج کیا،  کل صبح بچے(بقیہ نمبر5صفحہ6پر)
 کی لاش ملی تو پوسٹ مارٹم رپورٹ میں بچے سے بدفعلی ثابت ہوئی، بچہ منہ اور ناک کو بند کرنے کی وجہ سے مرا اور تشدد بھی ہوا، پولیس نے جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے تفتیش شروع کی اور ملزم جہانزیب عرف منا کو گرفتار کر لیا، ملزم نے اعتراف جرم بھی کر لیا ہے، انہوں نے کہا کہ واقعہ نے معاشرتی اقدار کو ہلا کر رکھ دیا، ملزم بچے کے والد کا کنڈکٹر ہے،  ملزم اور بچے کے والد کاشف کے مابین جسمانی تعلقات رہے ہیں، مقتول کے والد کے نہ ملنے پر اس نے انتقاما بچے سے زیادتی کی اور پھر اسے قتل کر دیا، مقتول کا والد معاملہ کو دباتا رہا اس لیے پولیس نے مقدمہ میں مقتول کے ماموں کو مدعی بنایا ہے، اس موقع پر ایس ایس پی آپریشنز حسام بن اقبال،  ایس ایس پی انویسٹیگیشن فراز احمد، ایس پی گلگشت حسن جہانگیر سمیت ایس ایچ او نیو ملتان ملک سعید، انچارج پی او رمضان گل، انچارج آئی ٹی شوکت صوبہ کمانڈو، سب انسپکٹر عبدالصبور و دیگر بھی ہمراہ تھے سی پی او ملتان خرم شہزاد حیدر  نے تھانہ دولت گیٹ کا وزٹ کیا، انہوں نے تھانہ کی حوالات، ریکارڈ روم، اسلحہ خانہ، مال خانہ کا معائنہ کیا اور تھانہ کی صفائی کا جائزہ لیا،  سی پی او ملتان نے تھانہ کی حوالات میں بند ملزمان سے سوالات بھی کئے، انہوں نے پولیس افسران کو ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں تھانہ کلچر کی تبدیلی سمیت عوام کے جان و مال کے تحفظ اور قانون کی حکمرانی کو یقینی بنانا ہوگا، انہوں نے ہدایت کی حوالات میں بند ملزمان کے ان انسانی حقوق کا خیال رکھا جائے جو قانون نے انہیں دئیے ہیں، سی پی او ملتان نے کہا کہ تھانے قانون کا قلعہ ہیں یہیں سے پولیس کا مثبت چہرہ عوام کے سامنے عیاں ہوتا ہے، تھانوں میں قانون پسند عوام کے ساتھ ایسا حسن سلوک ہونا چاہیے جو پولیس کے مثبت رویوں میں اضافے کا باعث بنے، سی پی او ملتان نے کہا کہ تھانوں کے ایس ایچ اوز کا تھانہ میں موجودگی کا وقت متعین ہونا چاہیے تاکہ عوام کے لئے اس کی دستیابی آسان ہو، سی پی او ملتان نے بیٹ بکس کا جائزہ لیا اور بیٹ افسران کو بیٹ ریکارڈ کی جلد تکمیل کی بھی ہدایت کی انہوں نے پولیس افسران سے کہا کہ مقدمات کی بھر پور طریقہ سے پیروی کر کے ملزمان کو سخت سزاوں کے لیے چالان بروقت عدالت میں جمع کروائیں اور زیر تفتیش مقدمات  کو جلد حقائق پر یکسو کریں۔ عوام کو جلد انصاف دلانے کے لیے ہرممکن اقدام کریں، ایس پی سٹی ڈویژن احمد نواز شاہ اور ڈی ایس پی ہمایوں افتخار ان کے ہمراہ تھے