تحریک انصاف والے الیکشن کے نتائج تسلیم کریں،نیلم جبار

  تحریک انصاف والے الیکشن کے نتائج تسلیم کریں،نیلم جبار

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 لاہور(نمائندہ خصوصی) پیپلز پارٹی پنجاب کی ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات و سابق صوبائی وزیر نیلم جبار نے کہا ہے کہ بہتر ہو گا کہ پی ٹی آئی والے پنجاب کے وزیر اعلی کے الیکشن کے نتائج کو بھی تسلیم کریں اور گورنر پنجاب کسی کی ڈکٹیشن پر چلنے کی بجائے وزیر اعلی سے حلف لیں جو ان کی آئینی ذمے داری ہے انہوں نے پر امن اقتدار کی منتقلی کو ملک وقوم کیلئے انتہائی نیک شگون قراردیتے ہوئے کہا کہ اب ملک میں خوشحالی کادورشروع ہوگا ان ہا?س تبدیلی آتے ہی سٹاک مارکیٹ میں زبردست تیزی کاروبار میں اضافہ،ڈالرسستاہونا شروع ہو گیا اب انشاء اللہ اس نئے حکومتی اتحاد کی قیادت میں پاکستان ترقی کریگااورغریب عوام کے مسائل ضرورحل ہونگے اب عوام کوناہل حکومت سے نجات کے ثمرات ضرور حاصل ہونگے۔ 

لاہور(نمائندہ خصوصی) پیپلز پارٹی گلف و مڈل ایسٹ بزنس فورم کے صدر رانا فاروق اشرف نے کہا ہے کہ اب یہ بات تو ثابت ہو گئی ہے کہ پی ٹی آئی کی حکومت کے پاس معاشی پلان نہیں تھا اب تو ن کے وزیر خزانہ نے بھی بتا دیا ہے کہ پی ٹی آئی کی حکومت کے پاس کوئی معاشی پلان سرے سے ہی موجود نہیں تھا جبکہ عمران خان کہا کرتے تھے کہ ان کے پاس سو معاشی بحران سے نمٹنے کے پلان موجود ہیں وہ اپنی حکومت میں ہر روز قوم کو محض گمراہ کرتے رہے ہیں موجودہ اتحادی حکومت عوام کی زندگی میں آسودگی لانے کی ہر ممکن کوشش کرے گی گراں فروشی اشیاء ضروریہ کی قیمتوں کو بھی کنٹرول کیا جائے گا اور مہنگائی پر قابو پانے کے لیے بھی اقدامات کیئے جائیں گے۔
s1
لاہور( نمائندہ خصوصی) پیپلز پارٹی شعبہ خواتین پنجاب کی جنرل سیکرٹری و سابق ایم پی اے نرگس فیض ملک نے پنجاب کے صدر راجہ پرویز اشرف کو بلامقابلہ سپیکر قوم اسمبلی منتخب ہونے پر دلی مبارک باد دیتے ہوئے کہا ہے کہ راجہ پرویز اشرف کا سپیکر منتخب ہونا جمہوری اداروں کی فتح ہے اتحادی جماعتیں مل کر جمہوری اداروں کو مستحکم کرنے کے لئے اپنا بھرپور کردار ادا کر رہی ہے آج پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کی وجہ سے ایک نازک اور مشکل ترین صورتحال سے دوچار ہے مگر اتحادی جماعتوں کی حکومت اس بحران پر بھی جلد ہی قابو پالیں گی۔
s1
لاہور(نمائندہ خصوصی) پیپلز پارٹی این اے 75دسکہ کے مرکزی رہنما رانا محمود اشرف نے اپنے حلقہ کے عوام صحافیوں،وکلاء اور حلقہ کے معززین کے اعزاز میں دئیے گئے افطار ڈنر سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ بہتر ہو گا کہ مجھے کیوں نکالا کا راگ آلاپنے کی بجائے عمران خاموشی سے اپوزیشن میں بیٹھ جائیں اور نوجوانوں کو اکسانے کی بجائے پاکستان کو آگے بڑھنے دیں پہلے ہی ان کی حکومت کی وجہ سے پاکستان معاشی طور پر بہت نقصان اٹھا چکا ہے ا س وقت عمران خان کی سیاست ملک میں انتشار اور عدم برداشت کے کلچر کو پروان چڑھا رہی ہے جسکی ہم مذمت کرتے ہیں۔