وزیر داخلہ محسن نقوی کی زیرصدارت نیشنل ایکشن پلان عملدرآمد جائزہ کمیٹی کا اجلاس،کچے کے علاقے میں مشترکہ آپریشن کرنے کا فیصلہ

وزیر داخلہ محسن نقوی کی زیرصدارت نیشنل ایکشن پلان عملدرآمد جائزہ کمیٹی کا ...
وزیر داخلہ محسن نقوی کی زیرصدارت نیشنل ایکشن پلان عملدرآمد جائزہ کمیٹی کا اجلاس،کچے کے علاقے میں مشترکہ آپریشن کرنے کا فیصلہ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر داخلہ محسن نقوی کی زیرصدارت نیشنل ایکشن پلان عملدرآمد جائزہ کمیٹی اجلاس میں کچے کے علاقے میں مشترکہ آپریشن کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

نجی ٹی وی چینل جیو نیوز کے مطابق وزیر داخلہ محسن نقوی کی زیرصدارت نیشنل ایکشن پلان عملدرآمد جائزہ کمیٹی کا اجلاس ہوا،وفاقی سیکرٹری داخلہ، سربراہ نیکٹا، ڈی  جی ایف آئی اے اور سیکرٹری داخلہ ،پنجاب، سندھ، خیبرپختونخوا، بلوچستان، آزادکشمیر، گلگت بلتستان، اسلام آباد کے آئی جیز نے شرکت کی،نیشنل کوآرڈینیٹر نیکٹا، نیشنل ایکشن پلان اور انٹیلی جنس اداروں کی ٹیم اور چیف کمشنرزبھی اجلاس میں شریک  ہوئے،اجلاس میں چینی شہریوں کی سکیورٹی کے بارے میں کئے گئے اقدامات کا جائزہ  لیا گیا۔

اجلاس میں ایرانی صدر کے دورے کے دوران اسلام آباد،کراچی، لاہور میں سکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیا گیا،اجلاس میں پورے پاکستان کی پولیس کو نئی  ٹیکنالوجی فراہم کرنے کیلئے تفصیلی مشاورت ہوئی،اجلاس میں پاکستان بھر میں پولیس کو جدید ٹیکنالوجی دینے کے بارے میں بریفنگ دی گئی۔

وزارت داخلہ کی جانب سے جاری اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ اجلاس میں کچے کے علاقے میں مشترکہ آپریشن کرنے کا فیصلہ کیا گیاہے،وزیر داخلہ محسن نقوی نے کہاکہ پولیس سمیت تمام سکیورٹی ادارے چینی شہریوں کی حفاظت کیلئے ایس او پیز پر سو فیصد عملدرآمد یقینی بنائیں،غیرملکی شہریوں کی حفاظت کے ایس او پیز پر عملدرآمد میں غفلت پر سخت تادیبی کارروائی کی جائے گی، محسن نقوی نے کہاکہ دہشتگردی کے قلع قمع کیلئے ہمیں اپنے اداروں کو جدید ٹیکنالوجی سے لیس کرنا ہوگا، وفاق صوبوں کو ہر ممکن تعاون فراہم کرے گا۔

وزیر داخلہ نے کہاکہ کچے کے علاقوں سے شرپسندعناصر کا مشترکہ آپریشن سے مستقل خاتمہ کیا جائے گا، کچے کے علاقوں میں مشترکہ آپریشن کیلئے ڈرونز سمیت جدید ٹیکنالوجی کو استعمال میں لایا جائے گا، سمگلنگ کی روک تھام کیلئے گزشتہ چند ماہ میں اچھی پیشرفت ہوئی اور اس میں خاطر خواہ کمی آئی ۔