ہم مکمل ہوں کسی طور، بہت مشکل ہے۔۔۔

ہم مکمل ہوں کسی طور، بہت مشکل ہے۔۔۔
ہم مکمل ہوں کسی طور، بہت مشکل ہے۔۔۔

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اپنے افکار کی تذلیل میں لگ جاتے ہیں
ہم ترے حکم کی تعمیل میں لگ جاتے ہیں

جتنے بھی درد تو صدیوں میں عطا کرتا ہے
بس وہ اک شعر کی تنزیل میں لگ جاتے ہیں

ان کو فرصت ہی نہیں بات کی تمہید سنیں
ہم وہ پاگل ہیں جو تفصیل میں لگ جاتے ہیں

ہم ترے وصل کی تورات سے محروم رہے
اب ترے ہجر کی انجیل میں لگ جاتے ہیں

تو کہاں ہم سے ملا، بچھڑا کہاں، پھر بھی ملا
گزرے لمحات کی ترتیل میں لگ جاتے ہیں

آپ کا جس کے کنارے سے گزر ہوتا ہے
ہم کنول بن کے اسی جھیل میں لگ جاتے ہیں

کتنے مشرک ہیں خدایا کہ تری دنیا میں
تیرے بندے تیری تشکیل میں لگ جاتے ہیں

ہم مکمل ہوں کسی طور، بہت مشکل ہے
اب کے کاظم تری تکمیل میں لگ جاتے ہیں

 کلام :کاظم حسن کاظم

مزید :

شاعری -