مور یطانیہ‘ ”عید پر نئے کپڑے نہیں دلا سکتا “دلبرداشتہ شخص نے4بچوں کو ذبح کرڈالا

مور یطانیہ‘ ”عید پر نئے کپڑے نہیں دلا سکتا “دلبرداشتہ شخص نے4بچوں کو ذبح ...

نوواک چوٹ( آن لائن)موریطانیہ کے ایک شخص نے آنیوالے مسلمانوں کے مقدس تہوار عیدالفطر کے موقع پر بچوں کے نئے کپڑے خریدنے کے اخراجات سے بچنے کے لئے اپنے چار بچوں کے گلے کاٹ کر انہیں ذبح کردیا ۔یہ بات خاندان کے ایک قریبی ذریعہ نے جمعہ کے روز کہی ۔قتل کا یہ واقعہ دارالحکومت نوواک چوٹ کے نواحی علاقے عرفات میں پیش آیا جہاں ایک شخص جس کی عمر 40سال کے قریب ہے ¾ وہ پبلک سیکٹر نرس کے طور پر کام کررہا ہے اور اپنے خاندان کے ساتھ رہتا تھا۔خاندان کے قریبی ذرائع نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ جمعرات کی رات اس شخص نے اپنی اہلیہ کے گھر سے باہر جانے کاانتظارکیا جس کے بعد اس نے دوبیٹوں اور دو بیٹیوں کے گلے کاٹ دیئے ۔سب سے بڑے بیٹے کی عمر 12سال اورسب سے کم ایک سال کا تھا ،ایک ذریعہ کاکہنا تھا کہ بچوں کی والدہ نے گھر واپسی پر اپنے شوہر کو مسکراتے ہوئے پایا جو اس سے کہہ رہا تھا کہ میں نے چھٹی کے لئے بچوں کے کپڑے خریدنے سے متعلق تمہاری پریشانیوں سے نجات حاصل کرلی ہے ۔ خاندان کے قریبی لوگوں کا کہنا ہے کہ یہ شخص نفسیاتی مسائل سے دور چار تھا ، اس شخص کو گرفتار کرلیا گیا ہے اور پولیس کا کہنا ہے کہ اس نے اعتراف جرم کرلیا ہے اور کہا ہے کہ اس نے ایسا اس لئے کیا کیونکہ وہ نئے کپڑے نہیں خرید سکتا تھا جو کہ عید کے دوران ایک روایت ہے ۔اس واقعہ نے دارالحکومت کے رہائشیوں کو خوفزدہ کردیا ہے جو حالیہ تاریخ میں اپنی نوعیت کے اس جرم کو بھلا نہیں سکتے۔

مزید : صفحہ آخر