گستاخانہ خاکے : جرمنی کی حکومت اور عدلیہ کی سرپرستی میں بنائے جارہے ہیں، مذہبی جماعتیں

گستاخانہ خاکے : جرمنی کی حکومت اور عدلیہ کی سرپرستی میں بنائے جارہے ہیں، ...

ؒٓؒٓٓلاہور(نمائندہ خصوصی( تحریک حرمت رسولﷺاورجماعت الدعوةنے جرمنی کی عدالت کی طرف سے ایک تنظیم کو پلے کارڈ پر نبی اکرم ﷺ کے (نعوذ بااللہ)خاکے بنانے کی اجازت دینے پر شدید رد عمل ظاہر کیا ہے اور کہا ہے کہ جرمنی کی حکومت اور عدلیہ گستاخان رسول کی سرپرستی کر رہی ہے ،پاکستان اور سعودی عرب سمیت تمام مسلم ممالک جرمنی سے سفارتی تعلقات ختم کریں،دنیا میںبین المذاہب ہم آہنگی کا ڈھنڈورا پیٹنے والے قرآن پاک کی توہین اور نبی اکرم ﷺ کی شان میں گستاخیاں کر کے دنیا کا امن تباہ کر رہے ہیں ، جرمنی کی عدالت کا فیصلہ قابل مذمت ہے ،مسلم حکمران اس فیصلے پر ہوش کے ناخن لیں ،او آئی سی کا فوری اجلاس بلایا جائے، نبی اکرم ﷺ کی حرمت کا دفاع کرنا پورے اسلام کا دفاع کرنا ہے، تحریک حرمت رسولﷺ کے پلیٹ فارم سے تحریک جاری رکھیں گے ان خیالات کا اظہار امیر جماعت الدعوة پاکستان پروفیسر حافظ محمدسعید ،تحریک حرمت رسول ﷺ پاکستان کے کنوینئر مولانا امیر حمزہ، امیر تنظیم اسلامی حافظ محمد عاکف سعید، امیر جماعت اہلحدیث حافظ عبدالغفار روپڑی، جمعیت اہلحدیث کے ناظم اعلیٰ ابتسام الہی ظہیر،تحریک حرمت رسول ﷺ کے سیکرٹری جنرل قاری محمد یعقوب شیخ،جماعت اسلامی کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل ڈاکٹر فرید احمد پراچہ، جمعیت علماءاسلام (ف) کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات مولانا محمد امجد خان، رکن اسلامی نظریاتی کونسل آزاد کشمیر مولانا محمد شفیع جوش، مولانا سیف الدین سیف، حافظ محمد مسعود،مولانا محمد حسنین صدیقی، قاری محمد یوسف احرار، حافظ خالد ولید، مولانا محمد عاصم مخدوم و دیگر نے گفتگو کرتے ہوئے کیا ،حافظ محمد سعید نے سخت رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ جرمنی کی عدالت کے فیصلہ سے ثابت ہو گیا ہے کہ انکی حکومت اور عدلیہ سمیت سبھی ادارے اور تنظیمیں اسلام اور مسلمانوں کے خلاف تعصب کا مظاہرہ کرتے ہوئے جان بوجھ کر نبی کریم ﷺ کی شان اقدس میں گستاخیاں کر رہے ہیں پاکستان اور سعودی عرب سمیت تمام مسلم ممالک جرمنی سے سفارتی تعلقات ختم کریں ،او آئی سی اور مسلم تنظیموں و اداروں کو اس مسئلہ پر کسی صورت خاموش نہیں رہنا چاہئے بلکہ غیرت ایمانی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہر فورم پر بھر پور آواز بلند کرنی چاہئے اور گستاخان رسول کو ایسی مذموم حرکتوں سے روکنے کے لئے جرات مندانہ اقدامات اٹھانے چاہیںانہوں نے کہا کہ جرمنی کی حکومت اور عدلیہ خود کو صلیبیوں کا وارث کا سمجھ کر شان رسالت ﷺ میں گستاخیوںکا ارتکاب کر رہے ہیں دنیا میں بین المذاہب ہم آہنگی کا ڈھنڈورا پیٹنے والے قرآن پاک کی توہین اور نبی اکر مﷺ کی شان میں گستاخیاں کر کے دنیا کا امن تباہ کر رہے ہیں ۔

مزید : صفحہ آخر