حکومت کراچی میں امن قائم کرنے کے لئے سنجیدہ نہیں، شاداب رضا نقشبندی

حکومت کراچی میں امن قائم کرنے کے لئے سنجیدہ نہیں، شاداب رضا نقشبندی

لاہور (نمائندہ خصوصی( پاکستان سنی تحریک پنجاب کے صدر محمد شاداب رضا نقشبندی نے کہا ہے کہ حکومت امن قائم کرنے میں سنجیدہ نہیں کراچی کو آگ و خون میں نہلانے علماءاہلسنّت اور بے گناہ افراد کو قتل کرنے والے دہشت گرد آزاد گھوم رہے ہیں ۔ایسا محسوس ہوتا ہے کہ شہر کو آگ و خون میں دھکیل کر حکمران اپنی کرپشن چھپانے اور اقتدار کی مدت کو پورا کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں جو ملک و قوم کے دکھ و تکلیف کاکوئی احساس نہیں کرسکتے اُنہیں اقتدار سے چمٹے رہنے کا کوئی حق نہیں ۔ دہشت گرد حکومت اور اسکے اتحادیوں کی صفوں میں موجود ہیں حکومت نے اپنے مفادات کی خاطر کا لا چشمہ پہن لیا ہے اس لئے اس کو کراچی میں روز بروز بے گناہ عوام مذہبی و سیاسی و رکزاور علماءاہلسنّت کا قتل نظر نہیں آرہا ہے۔ کالعدم تنظیم کے لوگوںکا قتل ہوتاہے تو حکومت اور قانون کو حرکت میں لایا جاتا ہے۔ علماءاہلسنّت اور پاکستان سنی تحریک کے کارکنوں کا خون اتنا سستا نہیں ہے کہ حکمران مذمت تو درکنار کارروائی بھی عمل میں نہیں لاتے جو کہ حکومت کی دوغلی پالیسی ہے محب وطن اور دہشت گردوں میں حکومت کو تمیز کرنا چاہیے۔ حکومت نے دہشت گرد وں کو گرفتار نہ کیا تو سخت لائحہ عمل طے کرنے پر مجبور ہونگے ۔علامہ سلیم عباس نقشبندی شہید کے قاتلوں کا حکومت پولیس انتظامیہ سب کو پتہ ہے کاروائی کا نہ ہو نا اس بات کا غمازی کرتا ہے کہ حکمران اپنے مقاصد کےلئے دہشت گردوں کے خلاف آئین و قانون کو حرکت میں نہیں لا رہے جس کی وجہ سے دہشت گر دوں کے حوصلے بلند ہو رہے ہیں اور وہ کراچی کو کمزور کرنے کیلئے بے گناہ عوام کا قتل کر رہے ہیں ان خیا لات کا اظہار اُنہوں نے سنی تحریک علماءبورڈ کے رُکن علامہ سلیم عباس نقشبندی شہید کے قتل کے خلاف شدید ردِ عمل کا اظہار کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ حکومت ِ سندھ نے علامہ سلیم عباس نقشبندی شہید اور سنی تحریک کے کارکنان کے قتل میں ملوث دہشت گردوں کو گرفتار نہیں کیا تو دہشت گرد ی کے خاتمے اور حکومت کی سرد مہری کے خلاف عوام کوسٹرکوں پر لائیں گے ہمارے صبر کا امتحان نہ لیا جائے اگر صبر کا پیمانہ لبریز ہوگیا تو دہشت گرد وں کو چھپنے کی جگہ بھی نہیں ملے گی۔

مزید : صفحہ آخر