عیدالفطر کی آمد ، ٹرانسپورٹرز نے منہ مانگے کرائے وصول کرنا شروع کر دیئے

عیدالفطر کی آمد ، ٹرانسپورٹرز نے منہ مانگے کرائے وصول کرنا شروع کر دیئے

لاہور(وقائع نگار +سٹاف رپورٹر) عیدالفطر میں ایک دن باقی اور سرکاری تعطیلات شروع ہونے کے پیش نظر پردیسیوں نے اپنے آبائی شہروں ، دیہاتوں و قصبوں میں جانے کے لئے بس اڈوں اور ریلوے اسٹیشن کا رخ کرلیا ہے ۔گزشتہ روز صوبائی دارلحکومت میں واقع جنرل بس اسٹنیڈوں اور لاہور ریلوے اسٹیشن پر پردیسیوں کا تانتا بندھا رہا جبکہ ٹرانسپورٹ و ریلوے اسٹیشن پر قلی مافیا نے پردیسیوں کی مجبوریوں کا فائدہ اٹھاتے ہوئے زائد کرائے وصول کرنا شروع کردیئے ہیں ۔ریلوے اسٹیشن پر بلیک میں ٹکٹیں فروخت کی جارہی ہیں ۔تفصیلات کے مطابق عید الفطر کے موقع پر ٹرینوں پر مسافروں کا رش بڑھ گیا ہے ۔ مختلف ایکسپریس ٹرینوں پر پردیسیوں کی گزشتہ روز سے واپسی شروع ہوگئی۔عید کے بے پناہ رش کے باعث ٹرینوں کی ریزرویش کرانے کے لیے مسافروں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ دریں اثنا ءٹرینوں کی آمدورفت میں تاخیر کے باعث پردیسی خوار ہوگئے ہیں اور ٹرینوں کی منزل کی طرف روانگی کئی کئی گھنٹے تاخیر کا شکار ہے جبکہ ریلوے اسٹیشن پر بیٹھنے کے بھی مناسب انتظامات بھی نہیں کئے گئے ۔جس کے باعث پردیسی مسافروں کی مشکلات میں مذید اضافہ ہوگیا ہے علاوہ ازیں بتایا گیا کہ لاہور ریلوے اسٹیشن اور ریلوے ہیڈ کواٹر کے ریزرویشن میں کراچی جانے والی قراقرم ایکسپریس سمیت دیگر ٹرینوں کی ریزویشن نہیں ہورہی جبکہ ان ٹرینوں کی ٹکٹیں بلیک میں ریلوے اسٹیشن پر فروخت ہورہی ہیں۔جس کے باعث پردیسیوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔لاہور سے راولپنڈی اور کراچی جانے ٹرین کا اضافی کرایہ 50روپے سے 150روپے تک وصول کئے جارہے ہیں ذرائع نے بتایا کہ اس بلیک مافیا کو ریلوے پولیس اور ریز رویشن عملے کی باقاعدہ پشت پناہی حاصل ہے جس کی وجہ سے بلیک میں ٹکٹوں کی فروخت بند کرنا ممکن نہیں رہا ہے دریں اثنا ءجنرل بس اسٹینڈ ، نیازی اڈہ ، رہبر ٹریول و دیگر پرائیویٹ اڈوں پرہاکروں ، کنڈیکٹروں و ڈرائیوروں نے اپنا راج قائم کرتے ہوئے عیدی مہم کے تحت مختلف روٹس پر اصل کرایوں سے 50روپے تا 200روپے تک فی سواری اضافی کرایہ وصول کرتے رہے کرایوں میں ازخود اضافے کے پیش نظر ریلوے اسٹیشن و بس اڈوں پر پردیسیوں اور انتظامیہ کے مابین توں تکرار کا سلسلہ بھی چلتا رہا۔

مزید : صفحہ آخر