سرکاری ادارے پن بجلی بنانے کی ہدایت پر عمل کریں: ملک طاہر جاوید

سرکاری ادارے پن بجلی بنانے کی ہدایت پر عمل کریں: ملک طاہر جاوید

لاہور (کامرس رپورٹر)متعلقہ سرکاری ادارے پن بجلی بنانے کے لیے وزیر اعظم پاکستان کی ہدایت کو ملکی مفاد میں حکم کا درجہ دیں اور اس پر عملدر آمد کا آغاز کریں پہلے مرحلہ پر زیر تعمیر ہائیڈل منصوبوں پر کام کی رفتار تیز کی جائے تاکہ مستقبل قریب میں ملکی صنعت اور عوام کو سستی ترین بجلی ملنے کے امکانات روشن ہو سکیں ویب کوپ پنجاب کے چیئرمین ملک طاہرجاوید نے گزشتہ روز لاہور ٹاون شپ انڈسٹریل اسٹیٹ کے صنعتکاروں کے ایک گروپ سے ملاقات میں کہا ہے کہ وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف اور وزیر اعلی پنجاب میا ں محمد شہباز شریف جب سے اقتدار میں آئے ہیں بجلی کی پیداوار بڑھانے کے لیے سر توڑ کوششیں کر رہے ہیں۔

دوست ملکو ں کے اشتراک و تعاون سے تیل اور کوئلہ سے بجلی کے کئی منصوبے 2018 میں مکمل ہونے کی توقع ہے تاہم ملک طاہر جاوید نے کہا ہے کہ وزیر اعظم آئیندہ نسلوں کو تابناک صنعتی پاکستان دینے کے لیے آبی ذرائع سے سستی ترین بجلی بنانا چاہتے ہیں ملک طاہر جاوید نے کہا ہے کہ سستی اور وافر بجلی کے لیے کالا باغ ڈیم سود مند ترین ذریعہ تھا جسے سابقہ حکمرانوں نے متنازعہ قرار دے کر سر د خانے میں پھینک دیا تھا انہوں نے کہا ہے کہ واپڈا کے چیئرمین ڈیم مخالف عناصر کے تمام پروپیگنڈا کو غلط قرار دے چکے ہیں اس کے علاوہ بیشتر ڈیم مخالف سیاست دانوں کو عوام مسترد کر چکے ہیں اس لیے ملک طاہر جاوید نے کہا ہے کہ بڑے ڈیم پر کام شروع کرانے میں کوئی خطرہ یا مذائقہ نہیں ملک طاہر جاوید نے کہا ہے کہ وزیر اعلی پنجاب میاں محمد شہباز شریف ندی نالوں اور نہروں پر پن بجلی کے پراجیکٹ لگانے کا عندیہ دے چکے ہیں انہوں نے کہا ہے کہ اب جبکہ وزیر اعظم پاکستان پن بجلی کی افادیت و اہمیت کے پیش نظر آبی ذرائع سے بجلی حاصل کرنے پر توجہ دلا رہے ہیں بیورو کریسی وزیر اعظم پاکستان کی ہدایت کو اپنی خواہشوں کے پیچھے چھپانے اور حسب عادت لیٹ کرنے کی بجائے جلد از جلد عملدرآمد کا آغاز کرے ملک طاہر جاوید نے کہا ہے نیلم جہلم پراجیکٹ کے لیے بجلی کے صارفین ہر ماہ اضافی ریونیو دے رہے ہیں لیکن اس کے بارے میں خوشخبری سننے کو نہیں مل رہی اس لیے ملک طاہر جاوید نے کہا ہے کہ ہائیڈل ذرائع سے بجلی بنانے کے منصوبوں کے دھندلے پس منظر کو صاف و شفاف بنا کر زیر تعمیر ڈیموں کو جلد از جلد مکمل کیا جائے ۔

مزید : کامرس


loading...