بھارتی وزیر اعظم کے اشتعال انگیز بیانات پر بلوچستان میں مظاہرے ،ترنگا نذر آتش،پاک فوج کے حق میں نعرہ بازی

بھارتی وزیر اعظم کے اشتعال انگیز بیانات پر بلوچستان میں مظاہرے ،ترنگا نذر ...

کوئٹہ (مانٹیرنگ ڈیسک،اے این این) بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے بلوچستان سے متعلق بیان کے خلاف کوئٹہ سمیت صوبے بھر میں شہریوں کی جانب سے شدید احتجاج ،بھارتی ترنگا اور نریندر مودی کے پتلے نذر آتش ،پاک فوج کے حق میں نعرے بازی ،عالمی برادری سے مودی کے بیان کا نوٹس لینے کا مطالبہ ،مودی نے مداخلت کا اعتراف کر لیا،بھارت کے ہاتھوں استعمال ہونے والے اب آنکھیں کھول لیں ،مظاہرین کا موقف۔ تفصیلات کے مطابق بلوچستان کے شہری بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے بیان کے خلاف سراپا احتجاج ہیں۔ کوئٹہ سمیت چاغی، چمن ، خضدار اور دیگر شہروں میں عوام کی جانب سے ریلیاں نکالی گئیں۔ آل پارٹیز کے زیر اہتمام دالبندین میں ریلی نکالی گئی جب کہ شرکا ریلی نے نریندر مودی کے پتلے اور بھارتی پرچم نذر آتش کئے اور شرکا نے پاک فوج کے حق میں نعرے بھی بلند کئے۔اسی طرح بلوچستان کے صدر مقام کوئٹہ میں بھی شہریوں کی جانب سے بھارتی وزیراعظم کے بیان کی شدید مذمت کی گئی اور انہوں نے بھارتی وزیراعظم کے بیان کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے ان کے پتلے اوربھارتی پرچم نذر آتش کئے۔ چمن میں بھی شہریوں کی جانب سے بھارتی وزیراعظم کے بلوچستان سے متعلق بیان پر شدید غم و غصے کا اظہار کیا گیا۔بلوچستان میں بھارتی مداخلت اور مودی کے بیان کے خلاف سبی میں ریلی نکالی گئی ، ریلی میں ہندو برادری کی بڑی تعداد نے بھی شرکت کی ۔ دالبندین کے شہری بھی بھارتی وزیراعظم کے خلاف نعرے لگاتے ہوئے سڑکوں پر آگئے ۔چمن میں متحدہ قبائل نے احتجاجی ریلی نکالی جو پاک افغان بارڈر پر اختتام پذیر ہوئی ۔ ریلی کے شرکا نعرے بازی کرتے رہے ۔ نوشکی میں نکالی گئی احتجاجی ریلی میں پتلا بھی جلایا گیا ۔بلوچستان کے کئی شہروں میں محب وطن شہریوں نے بھارتی مداخلت کے خلاف اپنے جذبات کا اظہار کیا۔مظاہرین کا کہنا تھا کہ بھارتی وزیر اعظم نے بلوچستان میں مداخلت کا اعتراف کر لیا ہے اب عالمی برادری کو نوٹس لینا چاہیے۔بھارت کے ہاتھوں استعمال ہونے والوں کی آنکھیں بھی اب کھل جانی چاہییں ۔واضح رہے کہ حال ہی میں اپنے بیان میں بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے کہا تھا کہ کشمیرکی موجودہ صورتحال کی وجہ سرحد پار پاکستان سے ہونے والی دہشت گردی ہے اور اب پاکستان کو بھی بلوچستان اورآزاد کشمیر میں مبینہ زیادتیوں کے لیے دنیا کے سامنے جواب دینا ہوگا۔مودی نے ایک اور بیان میں کہا تھا کہ بلوچستان کے عوام نے میرے بیان پر شکریہ ادا کیا ۔

مزید : صفحہ اول


loading...