امریکہ کے جنوب میں پانی اور مغرب میں آگ نے تباہی پھیلادی

امریکہ کے جنوب میں پانی اور مغرب میں آگ نے تباہی پھیلادی

واشنگٹن (اظہر زمان، بیوروچیف) امریکہ کے جنوب میں پانی اور مغرب میں آگ نے تباہی پھیلا رکھی ہے۔ جنوبی ریاست لوزیانا میں طوفانی بارشوں سے دریاؤں میں طغیانی آگئی اور سیلاب کے باعث ہلاک ہونے والوں کی تعداد 13 ہوچکی ہے۔ مغربی ریاست کیلیفورنیا کے جنگلات میں آگ لگتی رہتی ہے لیکن گزشتہ ہفتے لگنے والی آگ شدت سے پھیلتی ہوئی قصبوں تک پہنچ گئی اور 82 ہزار سے زائد افراد گھروں سے ہنگامی طور پر نکل کر پناہ لینے پر مجبور ہوگئے۔ تقریباً 35 ہزار گھر تباہ ہوچکے ہیں، جن کے مکینوں کو فائر فائیٹرز نے نکال کر محفوظ مقامات تک پہنچا دیا ہے۔ کیلیفورنیا ریاست کا جنوبی علاقہ آگ سے متاثر ہوا ہے۔ امریکہ کی جنوبی ریاست لوزیانا کے مغربی اور جنوبی علاقے میں سیلاب نے بہت تباہی مچائی ہے جبکہ قریبی ریاست ٹیکساس کے جنوبی مغربی حصے بھی سیلاب سے متاثر ہوئے ہیں۔ سیلاب کے باعث بے گھر ہونے والے افراد کی تعداد ایک لاکھ سے تجاوز کرچکی ہے۔

وائٹ ہاؤس نے ریاست لوزیانا کی صورت حال کے بارے میں ایک خصوصی رپورٹ جاری کی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ صدر اوبامہ کی ہدایت وفاقی حکومت ریاستی اور مقامی اداروں کی امدادی کارروائیوں میں بھرپور شرکت کر رہی ہے۔ فیڈرل ایمرجنسی مینجمنٹ ایجنسی (فیما) کے سربراہ کریگ فوگیٹ نے گزشتہ روز متاثرہ علاقے کا دورہ کرنے کے بعد جمعرات کو صدر اوبامہ کو تازہ ترین حالات سے آگاہ کیا ہے۔ صدر اوبامہ نے لوزیانا کے گورنر ایڈورڈز سے رابطہ کرکے انہیں بھرپور امداد فراہم کرنے کا یقین دلایا

مزید : صفحہ اول


loading...