کیلیفورنیا میں لگی آگ پر قابو نہ پایا جاسکا،1300فائرفائٹرکی کوششیں جاری

کیلیفورنیا میں لگی آگ پر قابو نہ پایا جاسکا،1300فائرفائٹرکی کوششیں جاری

واشنگٹن(آن لائن)امریکہ کی ریاست کیلیفورنیا کے جنوبی علاقوں میں بھڑک اٹھنے والی آگ پر تاحال قابو نہیں پایا جاسکا۔آگ بجھانے کا عملہ آگ بجھانے کی کوششوں میں مصروف ہے اور ان کا کہنا ہے کہ آگ کی نوعیت شدید ترین ہے۔لاس اینجلس کے قریب لگی اس جنگل کی آگ کی وجہ سے 82 ہزار افراد کو علاقہ خالی کردینے کا حکم جاری کیا گیا ہے۔اس آگ کو بلیو کٹ فائر کا نام دیا گیا ہے اور اس نے متعدد مکانات تباہ کر دیے ہیں اور کیلیفونیا اور نیواڈا کے درمیان ٹرانسپورٹ کا نظام بھی متاثر کیا ہے۔کچھ لوگوں نے آگ سے بچنے کے لیے بھاگ کر اپنی جان بچائی ہے۔یہ آگ منگل کو خشک سالی کے شکار ایک پہاڑی راستے پر لگی اورتقریبا 47 مربع میل کے علاقے میں پھیل گئی۔

آگ کو بجھانے کے لیے 1300 فائرفائٹرز کوششیں کر رہے ہیں۔آگ بجھانے کے عملے کے کمانڈر مائک واکوسکی کا کہنا ہے کہ انھوں نے گذشتہ 40 برسوں میں اس شدید آگ کبھی نہیں دیکھی۔تاحال کسی کے ہلاک ہونے کی مصدقہ اطلاعات نہیں ہیں تاہم سرغ رساں کتوں کی مدد سے تباہ ہونے والی جگہوں پر تلاش جاری ہے۔حکام کا کہنا ہے کہ وہ اس بارے میں کچھ نہیں کہہ سکتے کہ آگ سے کتنے مکانات تباہ ہوئے تاہم خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے ان کی تعداد سینکڑوں میں ہوسکتی ہے۔

مزید : عالمی منظر


loading...