لاہور ہائیکورٹ نے پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے کیلئے جی آئی ڈی سی ٹیکس کی وصولی روکدی

لاہور ہائیکورٹ نے پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے کیلئے جی آئی ڈی سی ٹیکس کی ...

لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہورہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس شمس محمود مرزا نے حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے وفاقی حکومت کو گیس کے بلوں میں پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے کے لئے جی آئی ڈی سی ٹیکس کی وصولی سے تاحکم ثانی روک دیاہے جبکہ کیس پر مزید سماعت26ستمبر تک کے لئے ملتوی کر دی گئی ہے۔عدالت نے میاں محمود الرشید ایڈووکیٹ کی درخواست پر نوٹس جاری کرتے ہوئے وفاقی حکومت سے 26 ستمبر تک جواب بھی طلب کیا ہے۔ عدالت نے ہدایت کی ہے کہ وفاقی حکومت کمرشل بلوں سے جی آئی ڈی سی کی وصولی ختم کرکے نئے بلز جاری کرے۔ درخواست گزار کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا ہے کہ وفاقی حکومت کی جانب سے جی آئی ڈی سی کی وصولی آئین کے آرٹیکل 9،25 اور 49 کی واضح خلاف ورزی ہے۔، درخواست میں مزید کہا گیا ہے کہ سینیٹ کمیٹی جی آئی ڈی سی کی وصولی روکنے کا فیصلہ کر چکی ہے،چنانچہ وفاقی حکومت کی جانب سے جی آئی ڈی سی کی وصولی روکنے کا حکم دیا جائے۔

جی آئی ڈی سی ٹیکس

مزید : صفحہ آخر