ٹرین سے گر کر 55سالہ شخص، کرنٹ سے 2افراد جاں بحق، کالا یرقان سے مزید 3اموات

ٹرین سے گر کر 55سالہ شخص، کرنٹ سے 2افراد جاں بحق، کالا یرقان سے مزید 3اموات

سیت پور ، راجن پور، روجھان، رحیم یار خان، ہارون آباد( نمائندگان) ٹرین سے گر کر 55سالہ شخص جاں بحق ہو گیا کرنٹ سے خاتون سمیت 2 افراد چل بسے کالا یرقان سے مزید 3افراد دم توڑ گئے جبکہ رودکوہی سیلابی پانی میں کمسن بچہ ڈوب گیا تفصیل کیمطابق رحیم یارخان سے بیورونیوزکے مطابق گزشتہ روز لاہور سے کراچی جانے والی شالیمار ایکسپریس میں گلشن عمر لاہور کارہائشی متوفی 55سالہ شمس الحق کراچی جار ہا تھا کہ بستی لعل دین موضع سلطان پور (بقیہ نمبر11صفحہ12پر )

کے نزدیک ٹرین سے گر کر سر پر لگنے والی گہری ضرب کے باعث زخموں کی تاب نہ لاتے دم توڑگیا پولیس نے کارروائی کے بعد نعش تدفین کیلئے لاہور سے آنے والے ورثاء کے حوالے کر دی۔ سیت پور سے نمائندہ پاکستان کے مطابق سیت پور کی نواحی بستی مرکنڈ کے رہائشی نذر حسین مرکنڈ کی اہلیہ عاشو مائی چارہ کاٹ رہی تھی کہ اچانک ٹوکہ مشین میں کرنٹ سے بجلی کا جھٹکا لگا جس سے وہ موقع پر ہی دم تو ڑ گئی ۔ہارون آباد سے نامہ نگار کیمطابق ہارون آباد کے نواحی گاؤں ٹبہ غلیاں والا میں ٹرانسفارمر میں خرابی کی وجہ سے گھروں میں ہائی وولٹیج آنے کی وجہ سے ایک جواں سالہ شخص جس کا نام محمد اقبال بتایا جاتا ہے اور دو معصوم بچوں کا باپ تھاجاں بحق ہو گیاواپڈا والوں کو ٹرانسفار مر کی خرابی کا بتایا مگر کوئی شنوائی نہ ہوئی لواحقین اور اہل علاقہ نے متوفی کی لاش سڑک پر رکھ کر فورٹ عباس روڈ بلاک کر دیا۔وقوعہ کی اطلاع ملنے پر اے سی ہارون آباد عارف خان نیازی اور ایس ایچ او تھانہ صدر چوہدری عمران موقع پر پہنچ گئے اور مظاہرین سے مذاکرات کے بعد روڈ کھلوا دیا۔دریں اثنا ایکسئین واپڈا ہارون آباد نے لائن سپرنٹنڈنٹ چوہدری ذوالفقار اور لائن مین مختار کو معطل کر کے انکوائری کا حکم دے دیا ہے۔سیت پور سے نمائندہ پاکستان کے مطابق موضع خنانی کے عاشق علی عرف اچھو طویل عرصہ سے کالے یرقان میں مبتلا تھا جو مختلف ہسپتالوں میں علاج کے سلسلہ میں داخل رہا لیکن افاقہ نہ ہوا آخر کار طویل عرصہ کالے یرقان میں مبتلا رہنے کے بعد دم توڑ گیا ۔رحیم یارخان سے بیورونیوزکے مطابق گزشتہ روز پتن منارہ کی رہائشی45سالہ شریفاں بی بی اور اوباڑو(سندھ) کی رہائشی80سالہ جیون مائی کو کالے یرقان میں مبتلا ہونے پر ورثاء نے انتہائی تشویشناک حالت میں طبی امدا د کیلئے ہسپتال منتقل کیا جہاں دونوں متاثرہ خواتین طبی امداد کے باوجود جانبر نہ ہوپائی24 گھنٹوں کے دوران کالے یرقان کے باعث ہلاک ہونے والوں کی تعداد 4 ہوگئی ہے۔روجھان سے نمائندہ پاکستان کے مطابق اناددین سکھانی کے گھر کے سامنے رود کوہی سیلابی پانی کھڑاتھا جس میں اسکا کم سن بیٹا میر حمزہ گر کر ڈوب گیا میر حمزہ کی لاش رود کوہی سیلابی پانی سے نکال لی گئی ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...