خیبر ایجنسی ،تاجروں اور شنواری قوم کا اہلکاروں کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

خیبر ایجنسی ،تاجروں اور شنواری قوم کا اہلکاروں کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

خیبر ایجنسی ( بیورورپورٹ)طورخم شہید موڑ پر تعینات اہلکاروں کے خلاف طورخم کے تاجروں اور شنواری قوم باچا مینہ کے رہائشی باشندوں نے احتجاجی مظاہرہ کیا اور کسٹم دفترطورخم سے شہید موڑ تک احتجاجی ریلی نکالی، طورخم روڈ کو ہر قسم کی ٹریفک کے لئے بند کرکے شہید موڑ پر تعینات اہلکاروں کے خلاف شدید نعرہ بازی کی، مظا ہرین نے اس موقع پر سیاہ جھنڈے اٹھا رکھے تھے ۔گز شتہ رات شنواری قوم باچہ مینہ طورخم کے رہائشی اور طورخم تاجر عجب خان شنواری کو گھر میں دل کا دورہ پڑاجسے فوری طبی امداد دینے کیلئے انکے بیٹوں نے ایجنسی ہیڈ کوارٹر ہسپتال لنڈیکوتل پہنچا نا چاہا لیکن با چہ مینہ طورخم سے تقریباً ایک کلو میٹر کے فاصلے پر افغان باشندوں کا پاکستان داخلہ روکنے کیلئے بنائی گئی شہید موڑ چیک پوسٹ پر تعینات ایف سی کے اہلکاروں نے ہسپتال جانے کی اجازت ا س لئے نہیں دی کہ وہ بغیر لائن میں کھڑے آگئے ہیں اس لئے ان سے مبینہ طور پر واپس چلے جانے کو کہا گیا ان کے رشتہ داروں نے ایف سی اہلکاروں کو اپنی اور مریض کے شناختی کارڈز بھی دیکھائے اور بہت منت سماجت کی لیکن ایف سی کے اہلکارنہیں مانے اور بیس منٹ بعد انکو ہسپتال جانے کی اجازت دی گئی تاہم وہ ہسپتال پہنچنے سے پہلے راستے میں ہی جاں بحق ہو گئے مر حوم کے رشتہ داروں نے لاش طورخم تحصیل پہنچا دی اور جمعرات کی صبح شنواری قوم باچہ مینہ اور طورخم تاجروں نے انکے رشتہ داروں کے ساتھ مل کر احتجاجی مظاہرہ کیامظاہرین سے خطاب کرتے ہو ئے حاجی خانزاد گل شنواری ،طورخم کسٹم کلئیرنس ایجنٹس کے صدر حاجی حیات اللہ،قیوم شنیواری اور عطااللہ نے کہا کہ انکے ساتھ ایف سی اہلکاروں نے بہت ظلم کیا انکے خلاف کارروائی کی جائے روزانہ شہید موڑ پر چیکنگ کے بہانے ایف سی اہلکار بد تمیزی اور بد اخلاقی سے پیش آتے ہیں انہوں نے کہاکہ شینواری باچہ مینہ کے باشندوں کو لنڈیکوتل آنے جانے کیلئے علیحدہ راستہ دیاجائے اور انکے طلباء اور مریضوں کو بغیر شناختی کارڈز کے لنڈیکوتل آنے جانے کی اجازت دی جائے انہوں نے کہا کہ احتجاج مطالبات تسلیم ہونے تک جاری رہیگا ذرائع کے مطابق بعد ازاں کمانڈ نٹ خیبر رایفلزنے انکوائری مقرر کی اورجائز مطالبات حل کرنے کی یقین دہانی کرائی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...