چارسدہ ،مسلح افراد نے 3دکانوں کو بلڈوزر کے ذریوہ ملیا میٹ کر دیا

چارسدہ ،مسلح افراد نے 3دکانوں کو بلڈوزر کے ذریوہ ملیا میٹ کر دیا

چارسدہ (بیورو رپورٹ) چارسدہ کے فاروق اعظم چوک سے چند قدم دور نوشہرہ روڈ پر مسلح افراد نے بلڈوزر کے ذریعے تین دکانوں کو ملیامیٹ کر کے قانون کی دھجیاں اڑا د ی ۔ لاکھوں روپے کا سامان تباہ ہو گیا ۔ مسلح افراد دکانوں میں موجود لاکھوں روپے کی نقدی بھی اٹھا کر لے گئے ۔ 12گاڑیوں میں سوار مسلح افراد کامیاب واردات کے بعد رفو چکر ہو گئے۔قانون کے محافظ خواب غفلت کی نیند سوتے رہے۔تفصیلات کے مطابق سٹی تھانہ چارسدہ کے حدود نوشہرہ روڈ پر مبینہ ملزمان یوسف علی ، واجد اور الطاف نے دوکانات کی ملکیت کے حوالے سے عدالتی فیصلے کے بعد دیگر مسلح ساتھیوں کے ہمراہ نورالنبی ، محمد الیاس او ر احمد جان کے دوکانوں کو بلڈیزر سے ملیامیٹ کیا اور واردات کے بعد رفو چکر ہو گئے ۔ اس حوالے سے متاثرہ تاجر وں نے میڈیا کو بتایا کہ مذکورہ دوکانات انہوں نے باقاعدہ قانونی طریقے سے خریدے ہیں اورسیف علی وغیرہ سے عدالتی تنازعہ چل رہا ہے ۔گزشتہ شب عدالت کے حکم امتناعی کے باوجود سیف علی وغیرہ نے قانون ہاتھ میں لیکر بلڈیز ر سے ہمارے دکانوں کو مسمار کیا جس کی وجہ سے لاکھوں روپے کا سامان بھی ملیامیٹ ہو گیا جبکہ ملزمان دوکانوں سے لاکھوں روپے کی نقدی بھی اٹھا کر لے گئے ۔ واقعہ کے حوالے سے تاجر اتحاد کے مرکزی صدر مولانا صلاح الدین ،سینرنائب صدر لعل محمد لعل اور متحدہ شاپ کیپر ز فیڈریشن کے مرکزی صدر حکیم اللہ فوجی نے شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ عدالتی فیصلے کے بعد سیف علی وغیرہ کو قانونی راستہ اختیار کرکے اجراء کے ذریعے قبضہ لینا چاہیے تھا مگر انہوں نے قانون ہاتھ میں لیکر تاجروں کا بہت زیادہ نقصان کیا ہے ۔ اس حوالے سے سٹی تھانہ کے ایس ایچ او عمرا ن خان نے کہاکہ قانون کے مطابق کاروائی کی جائیگی ۔ متاثرہ تاجروں کی درخواست پر نامزد ملزمان کے خلاف مقدمات درج کئے گئے ہیں جبکہ جائے وقوعہ سے بلڈیزر کے ڈرائیور کو گرفتار کیا گیا ہے اور دیگر ملزمان کی گرفتاری کیلئے عملی اقدامات کئے جا رہے ہیں۔ واقعہ کے حوالے سے بازار کے چوکیدار نے انکشاف کیا کہ سٹی پولیس کے اہلکار موبائل گاڑی میں آئے اور ملزما ن سے بات کرکے آرام سے چلے گئے اور پولیس نے ملزمان کو گرفتار کرنے کی کوئی کو شش نہیں کی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر