ماتحت عدالتوں کے 74ججوں کی اگلے عہدوں پر ترقی،10کو ناقص کارکردگی پر او ایس ڈی بنا دیا گیا

ماتحت عدالتوں کے 74ججوں کی اگلے عہدوں پر ترقی،10کو ناقص کارکردگی پر او ایس ڈی ...
ماتحت عدالتوں کے 74ججوں کی اگلے عہدوں پر ترقی،10کو ناقص کارکردگی پر او ایس ڈی بنا دیا گیا

  


لاہور(نامہ نگار خصوصی)چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ سید منصور علی شاہ کی زیر صدارت انتظامی کمیٹی کے اجلاس میں ماتحت عدالتوں کے74 ججوں کواگلے عہدوں پرترقی دینے کی منظوری دے دی گئی۔ ترقی پانے والوں میں 37سینئر سول ججز اور 37سول ججز شامل ہیں جبکہ 10سول ججوں کو ناقص کارکردگی کی بنیاد پر او ایس ڈی بنا دیا گیا ہے۔ قائم مقام رجسٹرار طاہر صابر کی جانب سے جاری نوٹیفیکیشن کے مطابق ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کے عہدے پر ترقی پانے والے سینئر سول ججز میں محمد سعید، ساجدہ احمد، انجم علی، عبد الجبار، محمد اشفاق، ماجد کریم فاروق، انواراللہ، محمد اختر بھنگو، محمد وسیم انجم، حیدر علی خان، اکرام الحق چودھری، محمد واجد منہاس، یاسر حسین خان، محمد اسلم پنجوتہ، شفیق احمد شفیع، نبیلہ جعفری سیدہ، محمد ابوبکر صدیق بھٹی، مبشر حسین، اظہر اقبال رانجھا، محمد اعجاز، محمد عرفان بسرا، فیصل محمود میر، مظہر فرید علی، سید اختر، اعجاز احمد گوندل، ظہیر احمد، محمود اعظم، محمد یوسف حافظ، سرفراز حسین، ریاض افضل چیمہ، ممتاز احمد نوید خالد، ذولفقار علی، شکیل احمد سپرا، سید شہزاد مظفر ہمدانی، قمر یٰسین ندیم اور رانا عمران شفیع جبکہ سینئر سول جج کے عہدے پر ترقی پانے والے سول ججز میں مستحسن احمد منہاس، حاکم خان بھکر، ملک امان اللہ خان، محمد اقبال، محمد اعجاز رضا، سعد سلمان خان، مصباح النبی، منور حسین، جہانزیب اختر، ماجد حسین، محمد احمد حسنین خان، محمد یٰسین موہل، اقتدار علی، محمد امجد خان، صائمہ حسنین، طاہر اسلم، یلمعاذغنی، عائشہ رشید اعوان، عرفان اکرم، سجاول خان، رحمت علی، مظہر عباس، عمران شہباز، عالم شیر، مظفر نواز ملک، سید علی عباس، خالد سلیم سوہل، محمد افضل مجوکہ، طارق مسعود، محمد آصف، خالد اقبال خان، محمد آصف، محمد خالد خان، محمد راشد، نادیہ صدیق اسد، شفیق عباس اور فرحان شکور شامل ہیں۔مزید برآں سول ججز محمد خالد محمود وڑائچ، ملک اللہ دتہ انجم، ساجد محمود شیخ، نوید کامران لنگڑیال، شاہد نواز کچھی، بابر حسین، شہزاد احسن بٹ، عبدالستار بھوسال، عابدزبیر اور محمد اکرم آزاد کو ناقص کارکردگی کی بنیاد پر او ایس ڈی بنانے احکامات بھی جاری کئے گئے ہیں۔

مزید : لاہور


loading...