ڈونلڈ ٹرمپ نے اشتعال انگیز بیانات پر معافی مانگ لی

ڈونلڈ ٹرمپ نے اشتعال انگیز بیانات پر معافی مانگ لی
ڈونلڈ ٹرمپ نے اشتعال انگیز بیانات پر معافی مانگ لی

  


واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک )امریکی ری پبلکن صدارتی امید وار ڈونلڈ ٹرمپ نے اشتعال انگیز بیانات پر معافیاں مانگنا شروع کردیں ۔شمالی کیرولائنا میں انتخابی ریلی کے دوران انہوں نے کہا کہ کبھی کبھار جوش خطابت میں منہ سے غلط الفاظ نکل جاتے ہیں جس کے لیے وہ معذرت چاہتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ غیر قانونی تارکین وطن کے ہاتھوں میرے دوست جمیل شاہ کا بیٹا قتل ہوا جو کہ افسوس ناک ہے ۔

ڈونلڈ ٹرمپ کی انتخابی مہم کے چیئر مین نے استعفیٰ دے دیا

ان کا کہنا تھا کہ وہ جمیل شاہ اور اس طرح کے دیگر والدین سے ملیں ہیں جن کے بچے غیر قانونی تارکین وطن افراد کے ہاتھوں مارے گئے ہیں ۔واضح رہے کہ گزشتہ دنوں ایف بی آئی کی جانب سے ڈونلڈ ٹرمپ کو سیکیورٹی پر بریفنگ دی گئی جس کے بعد سے ان کا رویہ تبدل نظر آرہا ہے ۔ٹرمپ کے دوست جمیل کا تعلق لاس اینجیلس سے تھا اور اس کے بیٹے کو 2 مارچ 2008 کو اس کے گھر باہر فائرنگ کرکے ہلاک کردیا گیا تھا۔ تحقیقات سے پتا چلا کہ جمیل کےبیٹےکوتارکین وطن کے ایک گینگ نے غلط فہمی کی بنیاد پر نشانہ بنایا تھا۔

مزید : بین الاقوامی


loading...