کراچی میں شہری پر تشدد کے بعد پنجاب میں بھی تحریک انصاف کا کارنامہ سامنے آگیا، ایم پی اے کے بھائی نے ہسپتال میں داخل ہو کر ۔۔۔

کراچی میں شہری پر تشدد کے بعد پنجاب میں بھی تحریک انصاف کا کارنامہ سامنے ...
کراچی میں شہری پر تشدد کے بعد پنجاب میں بھی تحریک انصاف کا کارنامہ سامنے آگیا، ایم پی اے کے بھائی نے ہسپتال میں داخل ہو کر ۔۔۔

  

اٹک (ڈیلی پاکستان آن لائن) پولیس کی جانب سے پاکستان تحریک انصاف سے تعلق رکھنے والے رکن صوبائی اسمبلی یاور بخاری کے بھائی کے خلاف ڈاکٹر پر تشدد کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

مقدمہ اٹک کے ضلعی ہسپتال کے ڈاکٹر فرخ حبیب کی جانب سے درج کرایا گیا ہے جنہوں نے الزام عائد کیا ہے کہ 12 اگست کو وہ ڈیوٹی پر موجود تھے کہ اسی دوران ایک شخص کو ایمرجنسی میں لایا گیا جسے الٹیاں لگی ہوئی تھیں ۔ مریض کو ضروری علاج معالجے کے بعد ایمرجنسی میں ہی داخل کرلیا گیا لیکن اس کے ساتھ آیا ہوا شخص میرے پاس آیا اور کہا کہ بخاری صاحب کا فون سنیں۔ میں نے کہا کہ میں مصروف ہوں کسی کا فون نہیں سن سکتا ۔ تھوڑی دیر بعد یاور بخاری کا بھائی 2 پولیس کانسٹیبلز اور 4 سے 5 مسلح افراد کے ساتھ ایمرجنسی میں داخل ہوا اور مجھے گریبان سے پکڑ کر میرے منہ پر تھپڑ مارے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل کراچی میں تحریک انصاف کے ارکان اسمبلی کی جانب سے شہریوں پر تشدد کے 2 واقعات رپورٹ ہوچکے ہیں۔ پہلا واقعہ اس وقت پیش آیا جب تحریک انصاف کے نومنتخب رکن سندھ اسمبلی ڈاکٹر عمران شاہ نے ایک شہری کو بیچ سڑک پر تشدد کا نشانہ بنایا اور بعد ازاں معافی مانگ لی ۔ دوسرا واقعہ بھی کراچی میں ہی پیش آیا جب تحریک انصاف کے رہنما منصور احمد شیخ نے گاڑیوں کے ایک شوروم پر توڑ پھوڑ کی۔

مزید : سیاست /علاقائی /پنجاب /اٹک