ماسکو میں پاکستان کی ’’شام آزادی‘‘ کا باوقار اہتما م

19 اگست 2018 (16:59)

ماسکو(اشتیاق ہمدانی سے ) ماسکو میں پاکستان کمیونٹی کے زیر اہتمام باوقار انداز میں شام آزادی منائی گئی۔ جشن آزادی کی تقریب میں پاکستان کے روس میں متعین سفیرقاضی محمد خلیل اللہ مہمان خصوصی تھے.اس موقع پر قاضی محمد خلیل اللہ نے کہا کہ ہم نے اپنا دفاع اتنا مضبوط کرلیا ہے کہ کسی کی مجال نہیں کہ وہ پاکستان کی طرف میلی آنکھ سے دیکھ سکے. ہمارے ہاں جمہوریت مضبوط ہوئی ھے ۔ نئی حکومت کے مکمل ہوتے ہی پاکستان کو جو چیلنجز ہیں ان میں معشیت اور پانی کا بڑا چیلنج ھے اورٹریڈ منسٹر ناصر حامد صاحب نے آج خوشخبری سنائی ھے کہ اس سال پاکستان کی ایکسپورٹ روس میں 25 ملین ڈالرز سے بڑھنے کی توقع ھے، اس میں جہاں ناصر حامد صاحب کی کوششیں ھیں وہاں پاکستان کمیونٹی کے تعاون کی ضرورت ھے. پاکستانی سفیرقاضی محمد خلیل اللہ نے کہا کہ ہماری آبادی بڑھ رہی ھے اور پانی کی قلت میں بھی اضافہ ہو رہا ھے، اور ضروری ھے کہ نئے ڈیم بنائے جائیں، پاکستان کے چیف جسٹس نے ایک فنڈ قائم کیا ھے جس میں قوم بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہی ھے. انھوں نے زور دیا کہ کمیونٹی اس میں بھرپور کردار ادا کرے. اس موقع پر پاکستان کمیونٹی کے صدر ملک شہباز نے ڈیم فنڈ میں اپنی طرف سے 1000 ڈالر دینے اور کمیونٹی کے ساتھ مل کر مزید فنڈ جمع کرنے کا اعلان کیا.

سفیر پاکستان نے فارن پالیسی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ہماری کامیاب فارن پالیسی سے روس کے ساتھ تعلقات اچھے ہوئے اور ہم مختلف ایشیوز پر ایک سیاسی موقف رکھتے ہیں . ان تعلقات کی بہتری میں کمیونٹی کا بھی کردار ہے. قاضی محمد خلیل اللہ نے کہا کہ خطے میں قیام امن کے لیے ہمسایہ ممالک کے ساتھ بہترین تعلقات قائم کیا جائیں. ہم چاہتے ہیں کے تمام تنازعات بشمول جموں کشمیر بات چیت اور پر امن طریقہ سے حل ہوں. اس کے ساتھ ساتھ پاکستان افغانستان میں امن اور خوشحالی دیکھنا چاہتا ہے. اس طرح ہم دیگر ممالک کے ساتھ بھی تعاون کے لیے تیار ہیں۔ بشمول روس جس سے افغانستان میں قیام امن ہو سکے. اس کے لئے ہم روس اور دیگر ممالک کے ساتھ تعاون کر رہے ہیں ، قاضی محمد خلیل اللہ نے اس خطے میں روس جیسے عظیم ملک کے ساتھ تعلقات قائم کرنے کوایک بڑا بریک تھرو اور پاکستان کی بہترین خارجہ پالیسی قرار دیا ۔

پاکستان بلوچ اوورسیز یونٹی (اوپی بی یو) کے چیرمین ڈاکٹر جمعہ خان مری نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارت یا کوئی بھی پاکستان دشمن ہمیں اس وقت تک شکست نہیں دے سکتا، جب تک ہم متحد ہیں ، ہمیں متحد ہوکر پاکستان کو مظبوط بنانا ھے. ترقی کرنی ھے، آگئے بڑھنا ہے. پاکستان کمیونٹی کے صدر ملک شہباز نے کہا کہ پاکستان ایک نعمت ھے اور ہم آج اس عزم کے ساتھ جشن آذادی کی منارہے ہیں کہ پاکستان کی ترقی بقا کے لئے تن من دھن سب قربان کریں گے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سینئر صحافی سید اشتیاق ہمدانی نے کہا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں ایک طرف مسلم نسل کشی میں مصروف ہے دوسری طرف اے 35 ختم کر کے غیرریاستی باشندوں آباد کرنے کی سازش کر رہا ھے ، تاکہ حق خوداردیت کے بنیادی مطالبے کے نتائج کو تبدیل کر سکے. اورسیز پاکستان بلوچ یونٹی کے کوارڈنیٹر زاہد خورشید نے بھارت کی جانب سے پاکستان پانی بند کرنے کی دھمکیوں پر مودی کو تنقید کا نشانہ بنایا. پاکستان کمیونٹی کے سابق صدر ڈاکٹر مجاہد مرزا نے کہا کہ ہمیں امن چاھئے ، ہم امن سے جینا چاہتے ہیں۔ اورپاکستان ٹرید ہاوس کے ڈاکٹر زاہد علی خان اور بلوچ بزنس مین امتیاز چانڈیو نے بھی خطاب کیا۔ پاکستانی نوجوان فنکاروں ڈاکٹر ذوالفقار گاگی ،ملک طاہر، اشرف راجپوت نے اپنی بھر پور پرفارمنس کا مظاھرہ کرتے ہوئے ملی نغمے پیش کئے.۔ اور خوب داد حاصل کی۔

مزیدخبریں