افغانستان، شادی ہال میں خودکش دھماکہ، بارودی سرنگ پھٹنے ست 75شہری جاں بحق، 200سے زائد زخمی پاکستان کا اظہار افسوس

افغانستان، شادی ہال میں خودکش دھماکہ، بارودی سرنگ پھٹنے ست 75شہری جاں بحق، ...

  

کابل،اسلام آباد(این این آئی، مانیٹرنگ ڈیسک)افغانستان کے دارالحکومت کابل میں شادی کی تقریب میں دھماکے سے کم از کم 63 افراد ہلاک او200 زخمی،جبکہ صوبہ بلخ میں سڑک کنارے نصب بارودی سرنگ پھٹنے سے خواتین بچوں سمیت 12شہری جاں بحق ہو گئے۔تفصیلات کے مطابق دھماکہ ہفتے کی رات کو مغربی کابل کے شادی ہال میں جاری ایک شادی کی تقریب کے دوران پیش آیا۔افغان میڈیا کے مطابق خودکش بم دھماکہ  پولیس ڈسٹرکٹ 6 میں واقع شارع دبئی ہال کے اندر ہوا، برطانوی میڈیا کے مطابق عینی شاہدین نے بتایا کہ ایک خودکش بمبار نے شادی کی تقریب میں خود کو دھماکا خیز مواد سے اڑادیا، دھماکہ مقامی وقت کے مطابق رات 10 بج کر 40 منٹ پر ہوا۔طالبان نے حملے میں کسی بھی طرح سے ملوث ہونے کی تردید کردی۔اطلاعات کے مطابق شادی کی تقریب میں 1000 افراد شریک تھے۔وزارت داخلہ کے ترجمان نصرت رحیمی کا کہنا تھا کہ ہلاکتوں کی تعداد کابل میں حالیہ مہینوں میں ہونے والے حملوں سے کہیں زیادہ ہے۔ان کا کہنا تھا کہ زخمیوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔شادی کی تقریب میں موجود محمد فرہاگ کا کہنا تھا کہ وہ خواتین کے لیے مختص جگہ پر تھے کہ انہوں نے مردوں کی جگہ سے دھماکے کی آواز سنی۔انہوں نے کہا کہ 20 منٹ تک شادی ہال میں دھواں بھرا رہا، مردوں کی جگہ سے تقریباً تمام افراد ہلاک یا زخمی ہوئے، دھماکے کے 2 گھنٹے بعد بھی شادی ہال سے لاشیں نکالی جاتی رہیں۔پاکستان نے افغانستان کے دارالحکومت میں ہونے والے بم دھماکے کی مذمت کر دی۔ دفتر خارجہ کی جانب سے کہا گیا ہے کہ دہشتگردی امن کیلئے خطرہ ہے، خاتمے کیلئے مل کراقدامات اٹھانا ہوں گے۔ترجمان دفترخارجہ نے دھماکے میں لوگوں کی قیمتی جانوں کے ضیاع پر اظہار افسوس کیا، ان کا کہنا تھا کہ ہماری ہمدردیاں متاثرہ خاندانوں کیساتھ ہیں، جاں بحق افراد کی مغفرت اور زخمیوں کی جلد صحتیابی کے لیے دعاگو ہیں۔ پاکستان نے ہمسایہ ملک افغانستان کو دہشتگردی کے خاتمے کیلئے مل جل کر اقدامات اٹھانے کی پیش کش کی ہے۔دریں اثناء افغان شمالی صوبہ بلخ میں سڑک کنارے نصب بارودی سرنگ پھٹنے کے نتیجے میں خواتین اور بچوں سمیت 12 افغان شہری جاں بحق ہوگئے۔افغان ذرائع ابلاغ نے صوبہ بلخ کے ضلع دولت آباد کے گورنر محمد یوسف کے حوالے سے بتایا ہے کہ اتوار کی صبح شمالی صوبہ بلخ کے ضلع دولت آباد کے گاوں باربر میں سڑک کے کنارے نصب بارودی سرنگ کی زد میں آکر شہریوں کو لے جانے والی ایک گاڑی دھماکہ سے تباہ ہوگئی جس میں سوار 12 افغان شہری جاں بحق ہوگئے۔ گورنر کے مطابق جاں بحق افراد میں دو بچے اور سات خواتین بھء شامل ہیں۔گورنر کے مطابق گاڑی دولت آباد سے مزار شریف جارہی تھی۔گورنر نے الزام لگایا ہے کہ بارودی سرنگ طالبان نے نصب کیا تھا جہاں گزشتہ دو روز سے طالبان اور افغان فوج کے مابین جھڑپیں جاری ہیں۔

افغانستان/دھماکے

مزید :

صفحہ اول -